18 سال پرانے مقدمے میں دلیپ کمار باعزت بری

Image caption دلیپ کمار اور سائرہ بانوں ایک مخصوص تقریب پر ایک ساتھ

برصغیر کے ممتاز اداکار دلیپ کمار کو ایک 18 سال پرانے مقدمے میں بری کر دیا گیا ہے۔

یہ چیک باؤنس کا مقدمہ تھا اور 94 سالہ دلیپ کمار عدالت میں حاضر نہیں تھے۔

بھارتی میڈیا این ڈی ٹی وی کے مطابق یہ کیس در اصل کولکتہ کی کمپنی ’جی کے ایکزم انڈیا پرائیوٹ لمیٹڈ‘ کے خلاف تھا جس کے دلیپ کمارسنہ 1998 میں ’اعزازی چیئرمین‘ تھے۔

ان کے علاوہ تین ڈائرکٹروں کے خلاف مقدمہ قائم کیا گیا تھا۔ مقدمے کی سماعت میں دلیپ کمار کے علاوہ ایک دوسرے ڈائرکٹر کو چیک باؤنس کی ذمے داری سے بری کر دیا گیا ہے جبکہ دو دوسرے ڈائرکٹروں کو قصور وار ٹھہرایا گيا ہے۔

گذشتہ روز دلیپ کمار کی اہلیہ اور اپنے زمانے کی معروف اداکارہ سائرہ بانو نے کئی ٹویٹ کے ذریعے دلیپ کمار کے مداحوں سے اداکار کی صحت کے متعلق دعا کی اپیل کی تھی اور کہا تھا کہ ’اعصابی مسائل کے باوجود انھوں نے کبھی مقدمے کو موخر کرنے کی درخواست نہیں دی۔‘

تاہم انھوں نے مقدمے کی تفاصیل ظاہر نہیں کی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ BJPRajnathSingh
Image caption وزیر داخلہ راج ناتھ سنـگھ نے دلیپ کمار کے گھر جاکر انھیں پدم وبھوشن ایوارڈ دیا

ایک سیمنٹ کمپنی نے مذکورہ کمپنی کے ساتھ تجارت میں ایک کروڑ کے قریب سرمایہ کاری کی تھی اور اسے جو چیک دیا گیا تھا سب کا سب باؤنس کر گیا۔

مقدمے کی سماعت کرتے ہوئے مجسٹریٹ نے کہا کہ چونکہ دلیپ کمار اس کمپنی کے روزانہ کے کام کے ذمے دار نہیں تھے اس لیے انھیں اس الزام سے بری کیا جاتا ہے۔

دلیپ کمار کو اس سے قبل بھی جائداد کے مسئلے کا سامنا رہا ہے اور انھیں عدالت سے انصاف ملا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ saira bano
Image caption فلم گوپی کا ایک سین

حال ہی میں حکومت نے انھیں ان کے گھر پر پدم وبھوشن ایوارڈ دیا تھا۔

دلیپ کمار نے تقریبا نصف صدی تک بھارتی سینیما بین کو اپنی اداکاری سے لبھاتے رہے اور اس دوران انھوں نے تقریبا 60 فلموں میں اداکاری کی۔ دلیپ کمار اور سائرہ بانو نےفلم ’گوپی‘، ’سگینہ‘، ’بیراگ‘ اور ’دنیا‘ میں ایک ساتھ اداکاری کی ہے۔

اسی بارے میں