میری اداکاری کی بھوک ابھی نہیں مٹی: دیپتی نول

دیپتی نول
Image caption دیپتی نول کو شکایت ہے کہ انہیں من چاہے کردار نہیں مل سکے

شیام بینیگل کی فلم ’جذبہ‘سے ہندی فلموں میں قدم رکھنے والی بالی وڈ کی اداکارہ دیپتی نول کو آج بھی افسوس ہے کہ انہیں ایسے چیلنجنگ رولز نہیں ملے جنکی انہیں خواہش تھی۔

دیپتی نول جو جلد ہی چھوٹے پردے پر سیریل ’میری آواز ہی پہچان ہے‘ میں نظر آنے والی ہیں ان کا کہنا ہے کہ اتنے سال کام کرنے کے بعد بھی ایسا لگتا ہے کہ مجھے وہ مشکل کردار نہیں ملے جو میری اداکاری کی بھوک کو مٹا سکتے۔‘

بی بی سی ہندی سے بات چیت میں انھوں نے کہا ’میں جس طرح کے مشکل اور پیچیدہ کردار کرنا چاہتی تھی وہ نہیں مل سکے بلکہ ایسے کردار ملے جو میں کرنا ہی نہیں چاہتی تھی‘۔

حال ہی میں انہیں سٹار سکرین کی جانب سے فلم ’این ایچ 10‘ کے لیے بہترین سپورٹنگ ایکٹر ایوارڈ ملا تھا۔

منفی کردار میں دیپتی نول کی یہ پہلی فلم تھی. دیپتی کہتی ہیں، ’میں وِلن کے کردار کے لیے تیار نہیں تھی کیونکہ میں نے ایسا کچھ پہلے نہیں کیا تھا‘۔

Image caption دیپتی نول اور فاروق شیخ نے کئی فلموں میں ساتھ کام کیا ہے۔

’لیکن جب میں نے اس کردار کو نبھانا شروع کیا تو اچھا لگنے لگا۔ مجھے لگتا ہے میں ہر طرح کا کردار کرنے کے لیے تیار ہوں۔

دیپتی کہتی ہیں، ’میں نے اپنی زندگی میں بہت کچھ کرنے کی کوشش کی جیسے پینٹنگ، اداکاری، رائٹنگ لیکن موسیقی سیکھنے کا شوق کبھی پورا نہیں ہو سکا اور اس کے لیے وہ حود کو ہی ذمہ دار ٹھہراتی ہیں۔

وہ کہتی ہیں، ’میں نے اداکاری اور باقی چیزوں کو زیادہ توجہ دی اور موسیقی سیکھنے کی خواہش ہمیشہ دبائے رکھی لیکن اس عمر میں آکر محسوس ہے کہ میں نے موسیقی کیوں نہیں سیکھی‘۔

اینڈ ٹی وی پر دو گلوکاراؤں کی زندگی پر مبنی ایک سیریل میں گلوکارہ بننے کے بعد دیپتی کا اس طرف رجحان اور بڑھا ہے اور وہ کہتی ہیں، ’تھوڑی دیر ہی سہی، لیکن اب میں نے موسیقی سیکھنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور ویسے بھی سیکھنے کی کوئی عمر نہیں ہوتی‘۔

دیپتی نول کی کتاب ’سٹوریز فرام دین اینڈ ناؤ‘ منظر عام پر آچکی ہے۔ اس سے پہلے شاعری کے ان کے دو مجموعے بھی شائع ہو چکے ہیں۔

اسی بارے میں