اوپر بیٹھے لوگ دوستی نہیں چاہتے: غلام علی

تصویر کے کاپی رائٹ ROSHAN KUMAR
Image caption غلام علی بنارس میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے

پاکستان کے معروف غزل گلوکار غلام علی نے انڈیا اور پاکستان کے درمیان خارجہ سیکریٹری سطح کی مذاکرات کی کامیابی خواہش کے ساتھ کہا کہ اوپر بیٹھے لوگ نہیں چاہتے کہ دونوں ملکوں کے لوگ مل جل کر رہیں۔

غلام علی گنگا جمنی تہذیب کے معروف شہر بنارس (وارانسی) میں مسلسل دوسرے سال پروگرام پیش کریں گے۔

وہ وارانسی کے سنکٹ موچن کنسرٹ میں منگل کو اپنا پروگرام پیش کر رہے ہیں۔

پروگرام میں شرکت کے لیے وہ ان دنوں وارانسی میں ہیں اور انھوں نے ہندوستان اور تعلقات میں بہتری کی دعا کی ہے۔

ہند و پاک تعلقات کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں انھوں نے ہنستے ہوئے کہا: ’ہمارے اوپر جو بڑی طاقتیں ہیں ان کی وجہ سے بھی یہ گڑبڑ ہوتی ہے۔ کیونکہ اوپر والے لوگ یہ نہیں چاہتے کہ یہ آپس میں مل کر بیٹھیں۔ حالانکہ ہمسائے آپس میں بھائی ہوتے ہیں۔ اور ان میں تو پریم ہی ہونا چاہیے۔‘

خیال رہے کہ دہلی میں منگل کو دونوں ممالک کے خارجہ سیکرٹریوں کے اجلاس کا امکان ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ ROSHAN KUMAR
Image caption غلام علی کا پروگرام آج منگل کو ہو رہا ہے

انھوں نے کہا کہ وہ دعا کریں گے کہ دونوں ممالک کے لیے یہ اجلاس بہتر ثابت ہو۔

فنکاروں کے تعلق سے دونوں ملکوں میں ہونے والی سیاست کے سوال پر غلام علی نے کہا کہ ’فنکاروں کا اس معاملے میں دخل نہیں۔ انھوں نے کہا کہ ’دونوں ملکوں میں محبت بڑھے اور ہم محبت کا پیغام دیتے ہیں۔‘

رواں سال انڈیا کے کئی شہروں میں پاکستان فنکار کے خلاف احتجاج کے نتیجے میں غلام علی کے پروگرام منسوخ کر دیے گئے تھے۔ اس پر انھوں نے اپنے مخالفین کے لیے دعا کی کہ انھیں اچھی سمجھ عطا ہو۔

انھوں نے کہا کہ چاہے وہ کھیل کا میدان ہو یا پھر گیت و موسیقی کا پلیٹ فارم، دونوں ہی ممالک کے عوام امن اور بھائی چارہ چاہتے ہیں لیکن ’چند مٹھی بھر لوگوں کو شاید یہ گوارا نہیں۔‘

اسی بارے میں