جاپانی گلوکارہ پر مداح کی جانب سے چاقو کے وار

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption مایو تومیتا اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد سے بطور پاپ سٹار اور اداکارہ کے کام کر رہی ہیں۔

جاپان میں پاپ سٹار مایو تومیتا کو ایک مداح نے چاقو کے وار کر کے زخمی کر دیا ہے جس کے بعد ان کی حالت تشویش ناک بتائی جا رہی ہے۔

20 سالہ مایو تومیتا ٹوکیو میں ہونے والے کنسرٹ میں پرفارم کرنے کے لیے انتظار کر رہی تھیں کہ ایک مداح نے انھیں چاقو کے وار کر کے شدید زخمی کر دیا۔ انھیں سینے اور گردن پر تقریباً دو درجن زخم آئے۔

پولیس نے 27 سالہ توموہیرو ایوازکی کو موقع پر ہی گرفتار کر لیا۔ اطلاعات کے مطابق توموہیرو کا کہنا ہے کہ انھوں نے مایو تومیتا کو ایک تحفہ بھیجا تھا جو انھوں نے واپس کر دیا تھا اسی لیے وہ ان پر غصہ تھے۔

ایسی اطلاعات بھی ہیں کہ گلوکارہ نے گذشتہ ماہ ایک مداح کے خلاف پولیس میں شکایت درج کرائی تھی۔

جاپانی ذرائع ابلاع کے مطابق مایو تومیتا نے اس وقت پولیس سے رابطہ کیا تھا جب توموہیروایوازکی نے گلوکارہ کے خلاف ٹوئٹر سمیت دیگر سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر جذباتی تبصرے پوسٹ کرنا شروع کیے۔

حملے کے بعد جب پولیس نے انھیں گرفتار کیا تو اطلاعات کے مطابق انھوں نے بتایا کہ انھوں نے سٹیشن میں گلوکارہ کو روکا اور تحفے کے بارے میں پوچھا تھا۔

اطلاعات کے مطابق ان کا کہنا تھا کہ ’میں اپنے حواس کھو بیٹھا کیونکہ انھوں نے مجھے کو واضح جواب نہیں دیا۔‘

مایو تومیتا اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد سے بطور پاپ سٹار اور اداکارہ کے کام کر رہی ہیں۔

خیال رہے کہ سنہ 2014 میں جاپانی خواتین کے گروپ اے کے بی 48 کی دو ارکان پر ایک شخص نے حملہ کیا تھا۔

اسی بارے میں