سلم‍یٰ آغا کا بالی وڈ کے کپور خاندان سے رشتہ کیا؟

تصویر کے کاپی رائٹ SALMA AGHA twitter
Image caption او سی آئی کارڈ حاصل کرنے کے بعد سلمیٰ آغا انڈین وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے ساتھ

انڈيا نے فلم ’نکاح‘ سے شہرت پانے والی اداکارہ سلمیٰ آغا کو حال ہی میں اورسیز سِٹیزن آف انڈیا (او سی آئی) کا کارڈ دیا ہے جس کی وجہ سے انڈیا میں ان کا قیام اور کام دونوں میں آسانی ہوگی۔

سنیے سلمیٰ آغا کا انٹرویو

برطانوی شہریت رکھنے والی سلمیٰ آغا او سي آئی کارڈ ملنے کے بعد اب بلا روک ٹوک انڈیا آ جا سکتی ہیں۔

سلمیٰ آغا کے مطابق ان کی کئی نسلیں بالی وڈ سے وابستہ رہی ہیں اور ان کا تعلق راج کپور کے خاندان سے ہے۔

وہ بتاتی ہیں: ’فلموں میں یہ ہماری چوتھی نسل ہے۔ 30 کے عشرے میں جو سب سے پہلی ہیر رانجھا فلم بنی تھی اس میں میرے نانا جگل کشور مہرا نے رانجھا اور نانی نے ہیر کا کردار نبھایا تھا۔ میرے نانا پرتھوی راج کپور کے ماموں تھے۔ پرتھوی راج کپور کی ماں اور میرے نانا سگے بہن بھائی تھے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ BR Chopra
Image caption سلمیٰ آغا کو انڈین فلم ’نکاح‘ سے شہرت ملی تھی

وہ کہتی ہیں: ’میری ماں نے مشہور فلم ’شاہ جہاں‘ میں کام کیا تھا جس میں ’جب دل ہی ٹوٹ گیا تو جی کے کیا کریں گے‘ جیسا مشہور نغمہ تھا۔ اب میری بیٹی نے فلم ’اورنگزیب‘ میں کام کیا ہے۔‘

سلمیٰ آغا نے بی بی سی سے خصوصی بات چیت میں کہا: ’میری ماں امرتسر میں پیدا ہوئی تھیں۔ میرے والد کا امرتسر میں ہی بار تھا۔ وہ ایرانی نژاد تھے۔ میرا بچپن بھارت میں ہی گزرا لیکن تعلیم لندن میں حاصل کی۔ میرے والد خشک میووں کا کاروبار کرتے تھے۔ ان کا لندن آنا جانا لگا رہتا تھا۔ میرے نانا، ماں اور باپ کے پاس برطانوی پاسپورٹ تھا۔ میرے بچّے بھی برطانیہ میں پیدا ہوئے۔‘

لوگوں میں یہ تاثر عام ہے کہ سلمیٰ آغا کا پاکستان سے زیادہ قریبی رشتہ رہا ہے تاہم سلمیٰ کہتی ہیں کہ انھوں نے پاکستانی فلموں میں تو کام کیا ہے لیکن وہ برطانیہ کی شہری ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ SALMA AGHA Twitter
Image caption سلمیٰ آغا کی کئی نسلیں بالی وڈ سے وابستہ رہی ہیں اور ان کا تعلق راج کپور کے خاندان سے ہے

برطانوی شہری ہونے کے باوجود سلمیٰ نے انڈين حکومت سے او سي آئی کارڈ لینے کا کیوں سوچا؟

اس سوال پر سلمیٰ کا کہنا تھا: ’یہ تو میرا حق تھا اور میں سوچتی ہوں کہ ایک انڈین شخص کے پاس انڈین شناخت ضرور ہونی چاہیے۔ میرا پورا خاندان انڈیا سے ہی ہے، اس لیے او سي آئی ملنے میں کوئی خاص مشکل بھی پیش نہیں آئی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ SALMA AGHA twitter
Image caption یہ تاثر عام ہے کہ سلمیٰ آغا کا پاکستان سے زیادہ قریبی رشتہ رہا ہے۔ وہ کہتی ہیں کہ انھوں نے پاکستانی فلموں میں تو کام کیا ہے لیکن وہ برطانوی شہری ہیں

فلم ’نکاح‘ کے دنوں کو یاد کرتے ہوئے سلمیٰ نے بتایا کہ فلم کے نغمے ’دل کے ارماں آنسوؤں میں بہہ گئے‘ کے لیے انھیں فلم فیئر ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔

سلمیٰ آغا کی بیٹی ساشا آغا نے فلم ’اورنگزیب‘ سے بالی وڈ میں قدم رکھا ہے، جب کہ بیٹے کی ہالی وڈ میں جلد ہی انٹری ہونے والی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Yashraj Films
Image caption سلمی آغا کی بیٹی ساشے کی بالی وڈ میں فلم اورنگ زیب سے انٹری ہو چکی ہے اور بیٹے کی جلد ہی ہونے والی ہے

مستقبل کے منصوبوں کے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ وہ ممبئی میں کئی برسوں سے رہ رہی ہیں اور جلد ہی ایک ٹی وی سیریئل میں دکھائی دیں گی۔

ٹی وی سیريئل ’میری آواز ہی میری پہچان ہے‘ کے سیٹ سے حال ہی میں اداکارہ امرتا راؤ نے سلمی آغا کے ساتھ شوٹنگ کی تصویر ٹوئٹر پر شیئر کی تھی اور لکھا تھا: ’سلمیٰ آغا اور میں، آج بھی نور جہاں نور ہیں۔‘

اسی بارے میں