چیچنیا کے رہنما قادروف کی ریئلٹی شو میں شرکت

تصویر کے کاپی رائٹ Rossiya 1
Image caption اس ریئلٹی شو کے ذریعہ رمضان کدرو اپنی ساتھی کو تلاش کریں گے

چیچنیا کے متنازع رہنما رمضان قادروف ٹی وی پر نشر ہونے والے رئیلٹی شو میں شرکت کریں گے۔ یہ ریئلٹی شو امریکی شو ’دی ایپرنٹس‘ کی طرز کا ہے۔

روس کے سرکاری میڈیا کے مطابق ریئلٹی شو میں جس کو ’دی ٹیم‘ کا نام دیا گیا ہے، کامیاب افراد کو مسٹر قادروف کی حکومت میں عہدہ دیا جائے گا۔

یہ پروگرام روس کے سرکاری ٹی وی چینل روسیا ون پر نشر کیا جائے گا اور اس میں شریک افراد کو چیچنیا کے خوبصورت ترین علاقوں میں بھجوایا جائے گا۔

پروگرام میں ہر عمر کے مرد اور عورت حصہ لے سکتے ہیں اور شریک افراد پہاڑ عبور کریں گے، جنگلات میں جائیں گے۔

شو کے ٹیلر میں مسٹر قادروف نے کہہ رہے ہیں کہ ’مقابلے کرنا والوں کو ہر طرح کی موسمی حالات، زندگی کے خطرات سمیت ہر طرح کے حالات کے لیے تیار رہنا ہو گا۔‘

پروگرام کے ہر مرحلے کو وہ خود اور ماہرین پر مشتمل ایک پینل جج کرے گا اور اس کے حتمیٰ مرحلے میں ’چیچنیا کے تعمیر و ترقی‘ کا ایک منصوبہ پیش کرنا ہو گا۔

ریئلٹی شو میں جیتنے والے شخص کو سٹرٹیجک ڈوپلمنٹ ایجنسی‘ کا سربراہ مقرر کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

چیچنیا میں کئی برسوں سے جاری عدم استحکام کے بعد رمضان قادروف ملک میں استحکام لانے میں کامیاب ہوئے ہیں اور انھیں روس کے صدر ولادی میر پوتن کا قریبی ساتھی سمجھا جاتا ہے۔

لیکن اُن کے ناقدین مسٹر قادروف اور اُن کے حامیوں پر قتل اور تشدد سمیت انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا الزام عائد کرتے ہیں۔

رواں سال کے آغاز میں اُنھوں نے انسٹا گرام پر ایک پوسٹ شیئر کی جس میں وہ اپنے سیاسی حریف پر بندوق تانے دکھائے گئے۔

مسٹر قادروف کا شمار روس کی مشہور شخصیات میں ہوتا ہے لیکن اس ریئلٹی شو کے ایڈونچر میں شرکت سے اُن کی مقبولیت میں اور اضافہ ہو گا۔

مقامی صحافی کا کہنا ہے کہ اس سے یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ کریملن اور اُس کے اتحادیوں کے لیے ٹیلی وژن کتنی علامتی اہمیت رکھتا ہے۔

اسی بارے میں