شاہ رخ کی چپل: ’ہرن کے چمڑے سے نہیں بنی‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پشاور میں مقیم شاہ رخ کے رشتہ دار نے دو جوڑے چپل تیار کرنے کا آرڈر دیا تھا

پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا میں محکمہ جنگلی حیات کے حکام کا کہنا ہے کہ بالی وڈ سپر سٹار شاہ رخ خان کے لیے پشاوری چپل تیار کرنے میں ہرن کا چمڑا استعمال نہیں کیا گیا تاہم چمڑے کا مفصل تجزیہ کیا جارہا ہے۔

محکمہ جنگلات کے ایک افسر سردار علی نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پشاور کے علاقے نمک منڈی چوک کے ایک کاریگر عمران ولد جہانگیر کو ہرن کے چمڑے سے چپل تیار کرنے پر مقدمہ درج کر کے انھیں گرفتار کر لیا گیا تھا۔

انھوں نے کہا کہ چپلوں کے چمڑے کے ابتدائی تجزیے سے معلوم ہوا ہے کہ اس میں ہرن کا چمڑا استعمال نہیں کیا گیا ہے لہذا کاریگر کو رہا کردیا گیا ہے۔ تاہم انھوں نے کہا کہ چپل بدستور محکمہ جنگلی حیات کی تحویل میں ہیں اور ان کا مفصل تجزیہ کیا جارہا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ فلم سٹار شاہ رخ خان کی پشاور میں مقیم رشتہ دار مہ جبین نے شاہ رخ خان کے لیے دو جوڑے پشاوری چپل تیار کرنے کا کہا تھا جس پر کاریگر نے چپلوں کا ایک جوڑا اپنی طرف سے ہرن کے چمڑے سے تیار کیا تھا اور جس کی تشہیر بھی گئی تھی۔

کاریگر عمران اور ان کا والد جہانگیر شاہ رخ خان کے بڑے مداح ہیں۔ان کاریگر باپ بیٹے نے اس سے پہلے پاکستان میں سیاسی رہنماؤں کے لیے چپل تیار کی تھیں۔

پشاور کے جہانگیر پورہ بازار اور نمک منڈی چوک میں پشاوری چپل بڑے پیمانے پر تیار کی جاتی ہیں اور اس میں آئے روز نئے انداز متعارف کیے جاتے ہیں۔ ان چپلوں کو ملک بھر میں شہرت حاصل ہے۔

کچھ عرصہ پہلے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عمران خان کے لیے تیار کی جانے والے چپلی کو کپتان سٹائل سے موسوم کیاگیا تھا جو بعد میں ملک بھر میں خاصی مقبول ہوگئی تھی۔ وزیراعظم نواز شریف کے لیے بھی اسی بازار سے چپل تیار کیے گئے تھے۔

اسی بارے میں