پٹھان کوٹ میں کیا ہوا، کیا ہو گا؟

اہم خبریں

فیچر اور تجزیے

مسعود اظہر: افغان جہاد کی پیداوار

اپنے بیشتر ہم عصر شدت پسندوں کی طرح مسعود اظہر نے افغانستان کا محاذ ٹھنڈا اور کشمیر کا گرم ہونے پر وہاں کا رخ کیا۔

چھ حملہ آور مارنے میں چار دن کیوں لگے؟

پٹھان کوٹ کے آپریشن کو خود کنٹرول کرنے کی واضح خواہش میں اجیت ڈوول نے ان تقریباً 50 ہزار فوجی جوانوں کو نظرانداز کر دیا جو کہ پہلے ہی علاقے میں موجود تھے۔

’صبح پہنچا تو منظر ہی بدلا ہوا تھا‘

اشوک مہتا نے پٹھان کوٹ میں موجود بی بی سی کے نامہ نگار نتن شریواستو کو بتایا کہ انہوں نے ایئر فورس بیس پر حملے کے دن کیا دیکھا۔

’مقصد مذاکرات کو سبوتاژ کرنا تو نہیں؟‘

صبح جیسے ہی پٹھان کوٹ کی ایئر بیس پر حملے کی خبر آئی بھارتی میڈیا نے شدت پسند تنظیم جیش محمد کو اس کا ذمہ دار ٹہرایا اور کہا کہ شدت پسندوں کا تعلق پاکستان سے ہے۔

پٹھان کوٹ: سوالات زیادہ اور جوابات کم

بھارتی شہر پٹھان کوٹ کی ایئر بیس پر گولہ باری کی گونج ابھی خاموش نہیں ہوئی ہے لیکن یہ سوال اٹھنے لگے ہیں کہ علاقے میں شدت پسندوں کی موجودگی کی معلومات ہوجانے کے باوجود بھی حملہ آوروں کو ايئر بیس میں داخل ہونے سے کیوں نہیں روکا جاسکا؟

کیا مودی حکومت ناکام ہو رہی ہے؟

بھارت کے وزیرِ اعظم نے سنہ 2015 کا اختتام پاکستان کے اچانک دورے سے کیا۔ پچھلے ڈیڑھ برس سے دونوں ممالک کے درمیان جو بات چیت رکی ہوئی تھی وہ اب نئے برس میں دوبارہ شروع ہو رہی ہے۔

’ایک اور اچانک ملاقات‘

راستہ روس افغانستان پہنچنے والے وزیر اعظم نریندر مودی کے ’اچانک‘ لاہور آنے کے اعلان نے میڈیا سمیت سب کو ہکا بکا کر دیا۔ آخر بیٹھے بٹھائے انھیں کیا ایسی سوجھی کہ لاہور اترنے کا ارادہ کر لیا؟