طاقتور چین سے بھارت کو تشویش: پینٹاگون

فائل فوٹو
Image caption چین نے اپنے دفاعی نظام کی تیزی سے جدید کاری کی ہے

پینٹاگن نے اپنی تازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ چین نے بھارت کی سرحد سے متصل جدید طرز کے میزائل نصب کیے ہیں۔ چین کی مستقل بڑھتی فوجی طاقت کا تجزیہ کرتے ہوئے امریکی محکمہ دفاع نے نئی رپورٹ تیار کی ہے۔

اس رپورٹ میں کہاگیا ہے کہ مستقبل کی حکمت عملی کے تحت چین پیپلز لبریشن آرمی کو تیزی سےجدید بنا رہا ہے۔

پینٹاگن کا کہنا ہے کہ بھارت کی سرحد پر چین کی طرف سے سی ایس ایس اور آئی آر بی ایم والی میزائل پہلے سے تعینات تھے لیکن اب ان کی جگہ ٹھوس ایندھن والے جدید طرز کے میزائل تعینات کردیئے گئے ہیں۔

Image caption بھارتی سرحد پر چین اپنی فوجی طاقت بڑھتا رہا ہے

پینٹاگن کی تازہ رپورٹ کے مطابق چین بھارتی سرحد کے پاس بنیادی ڈھانچے کی ترقی کے لیے بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کر رہا ہے اور سرحد سے لگے علاقوں میں اس نے سڑکوں اور ریل کے نظام کو بڑی حد تک بہتر کردیا ہے۔

امریکی محکمہ دفاع نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ بھارت کو چین اور پاکستان کے درمیان بڑھتے دفاعی رشتوں کے حوالے سے کافی تشویش ہے۔ اس کے مطابق مشرق وسطیٰ اور افریقہ میں چین کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ کے حوالے سے بھی بھارت کو کافی تشویش لاحق ہے۔

پینٹاگن کا کہنا ہے کہ چین سے سب سے زیادہ ہتھیار پاکستان خریدتا ہے اور دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی سودوں سے بھارت پریشان ہے۔ چین نے پاکستان کو جے ایف سترہ اور ایف سات جنگی جہاز، ہیلی کاپٹر، ٹینک، میزائل اور دیگر جدید ٹیکنالوجی فراہم کی ہے۔

پینٹاگن کا کہنا ہے کہ بھارت اور چین کے درمیان بات چیت کا سلسلہ بڑھا ہے لیکن اس کے باجود سرحد پر تناؤ میں کمی نہیں آئی ہے۔

اسی بارے میں