آخری وقت اشاعت:  پير 12 ستمبر 2011 ,‭ 05:33 GMT 10:33 PST

تمل ناڈو:مظاہرین پر پولیس فائرنگ، چھ ہلاک

پولیس کی مبینہ فائرنگ سے چھ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

تمل ناڈو کے ضلع راماناتھ پورم میں اتوار کو پولیس اور مظاہرین کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں اب تک چھ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

اتوار کو تشدد اس وقت شروع ہوا، جب پولیس نے ایک دلت رہنماء جان پانڈین کو گرفتار کیا۔ جان پانڈین ایک آنجہانی رہنماء کے یوم پیدائش کی تقریب میں حصہ لینے جا رہے تھے۔

پانڈین کی گرفتاری کے بعد لوگوں نے پارامكڈي میں پولیس اہلکاروں پر دھاوا بول دیا۔

مشتعل افراد نے پولیس کی کچھ گاڑیوں کو نذر آتش کردیا۔ اس جھڑپ میں پولیس کمشنر سمیت کئی اہلکار زخمی ہو گئے۔

مظاہرین کی جانب سے مبینہ ہنگامہ آرائی کے بعد پولیس نے مشتعل مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے گولی چلادی۔

تمل ناڈو کی وزیر اعلٰی جے للتا نے تشدد کی مذمت کی ہے اور ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کو ایک ایک لاکھ روپے معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اس کے پاس گولی چلانے کے علاوہ کوئی اور راستہ نہیں تھا۔ پولیس کی مبینہ فائرنگ سے چھ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

پانچ لوگوں کی اتوار کو ہی موت ہو گئی تھی، تاہم ایک زخمی نے پیر کو ہسپتال میں دم توڑ دیا۔

علاقہ میں امن قائم کرنے کے لیے اس واقعہ کے بعد پورے ضلع میں دفعہ 144 لگا دی گئی ہے۔

پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپ اور چھ افراد کی ہلاکت کے بعد قریبی اضلاع سے بھی مظاہروں کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔

ضلع مدرے میں کچھ لوگوں کے زخمی ہونے کی اطلاع بھی ہے۔

تمل ناڈو کی وزیر اعلٰی جے للتا نے تشدد کی مذمت کی ہے اور ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کو ایک ایک لاکھ روپے معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے۔

حالانکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پولیس نے اپنے دفاع میں گولیاں چلائیں۔ جے للتا نے عوام سے صبر کا مظاہرہ کرنے کی اپیل بھی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی فوائد کے لئے تشدد غلط ہے۔

[an error occurred while processing this directive]

BBC navigation

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔