آگرہ کے ہسپتال میں دھماکہ، تین افراد زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption آگرہ میں دھماکے کے بعد تاج محل کی سکیورٹی مزید سخت کردی گئی ہے۔

بھارت کی ریاست اتر پردیش کے شہر آگرہ کے ایک نجی ہسپتال میں دھماکہ ہوا جس میں تین افراد زخمی ہوگئے۔

آگرہ رینج کے پولیس سربراہ پی کے تیواری کا کہنا ہے کہ یہ دھماکہ جے ہسپتال کے استقبالیہ پر ہوا۔

پی کے تیواری کا کہنا تھا ’جے ہسپتال کے استقبالیہ پر حملہ آوروں نے دستی بم ایک بیگ میں ڈال کر ایک سیٹ کے نیچے رکھ دیا تھا۔‘

دھماکے کے بعد ہسپتال میں خوف و ہراس پھیل گیا جبکہ دھماکے کی آواز سے ہسپتال کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔

برطانوی خبررساں ادارے رائٹرز نے اطلاع دی ہے کہ اس دھماکے میں تین افراد زخمی ہوئے ہیں۔

پی کے تیواری کا کہنا ہے کہ اسے دہشت گرد حملہ قرار دینا قبل از وقت ہوگا۔

اس دھماکے کے بعد آگرہ میں واقع تاریخی عمارت تاج محل کی حفاظت پر مامور سکیورٹی کو مزید سخت کردیا گیا ہے۔

اس ماہ کے اوائل میں دہلی ہائی کورٹ میں ایک دھماکہ ہوا تھا جس میں پندرہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

ایک اسلامی شدت پسند تنظیم نے اس دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی تھی۔

اسی بارے میں