بھارتی وزیراعظم کی ایرانی صدر سے ملاقات

منموہن سنگھ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption منموہن سنگھ ایران کب جائیں گے یہ ابھی طے نہیں ہے

بھارت کے وزیر اعظم منموہن سنگھ نےایرانی صدر احمدی نژاد کی دعوت کو قبول کرتے ہوئے ایران کے دورے کا اعلان کیا ہے۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ہندوستان کے وزیر اعظم منموہن سنگھ اور ایران کے صدر احمدی نژاد کے درمیان ایک علیحدہ ملاقات کے دوران صدر احمدی نژاد نے منموہن سنگھ کو ایران کے دورے کی دعوت دی ہے۔

بھارتی وزیراعطم کے دورے کی حمتی تاریخ کا ابھی تک اعلان نہیں کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ سنہ 2001 میں ہندوستان کے سابق وزیرا‏عظم اٹل بہاری واجپائی ایران کے دورے پر گئے تھے۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں علیحدہ ملاقات میں دونوں رہنماؤں کے درمیان باہمی تعلقات کے بارے میں بات چیت ہوئی۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق بھارت کے خارجہ سیکریٹری رنجن متھائی نے بتایا کے دونوں رہنماؤں کے درمیان افغانستان کی صورتحال، مغربی ایشیائی اور افریقہ کی سیاسی صورتحال پر بات چیت ہوئی۔

ایک سوال کہ کیا بھارت اور ایران کے لیڈروں کی اس ملاقات سے بھارت اور امریکہ کے تعلقات پر کوئی منفی اثر پڑےگا۔ توان کا کہنا تھا کہ دونوں لیڈروں کے درمیان صرف باہمی مسائل پر بات چیت ہوئی ہے۔

رنجن متھائی کا مزید کہنا تھا کہ دونوں لیڈروں کے درمیان کئی معاشی مسائل پر بات چیت ہوئی ہے لیکن ایران، بھارت گیس پائپ لائن پر کوئی بات نہیں ہوئی ہے۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ اس ملاقات کے دوران ایران کے جوہری پروگرام سے متعلق بھی کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔

اسی بارے میں