بھارت: بھگدڑ سے سولہ ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption جنوری میں جنوبی ریاست کیرالہ میں ایک مذہبی تقریب کے دوران بھگدڑ مچنے سے تقریباً سو لوگ ہلاک ہوئے تھے

شمالی بھارت میں ہندوؤں کے مقدس شہر ہریدؤار میں ایک تقریب کے دوران بھگدڑ مچ جانے سے کم سے کم سولہ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق مرنے والوں کی تعداد بائیس ہے جبکہ پچاس افراد زخمی بتائے گئے ہیں۔

یہ حادثہ دریائے گنگا کے قریب جاری ایک مذہبی تقریب کے دوران پیش آیا۔

تقریب سے وابستہ ایک اہلکار ہیمنت ساہو نے ایک خبررساں ادارے کو بتایا ’زخمیوں کا ہمارے ہی عارضی اسپتال میں علاج کیا جارہا ہے، ہمارا خیال ہے کہ مرنے والوں کی تعداد بڑھ سکتی ہے۔‘

ہیمنت ساہو کے مطابق ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مند نذرانہ پیش کرنے کے لیے آگے بڑھ رہے تھے کہ بھگدڑ مچ گئی۔

نامہ نگار سہیل حلیم کے مطابق یہ لوگ ایک مذہبی رہنما کی سوویں سالگرہ منانےکے لیے جمع ہوئے تھے۔ منتظمین کا دعوی تھا کہ تقریب میں پچاس لاکھ افراد حصہ لیں گے تاہم جائے وقوعہ پر موجود افراد کی تعداد کے بارے میں ابھی کوئی ٹھوس معلومات دستیاب نہیں ہیں۔

اس سے پہلے رواں برس جنوری میں بھی جنوبی ریاست کیرالہ میں ایک مذہبی تقریب کے دوران بھگدڑ مچنے سے تقریباً سو لوگ مارے گئے تھے۔

اسی نوعیت کا ایک بدترین واقعہ سن دو ہزار آٹھ میں راجستھان میں پیش آیا تھا جہاں ایک مندر میں تقریباً دو سو بیس لوگ ہلاک ہوئے تھے۔

اسی بارے میں