’کانگریس چاہے تواتحاد توڑ سکتی ہے‘

ممتا بینرجی تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ممتا بینرجی کانگریس کی اتحادی ترنامول کانگریس کی سربراہ ہیں

ریاست مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ اور مرکز میں حکومت کی اہم اتحادی ممتا بینرجی نے کہا ہے کہ وہ ہمیشہ اکیلے ہی کام کرتی آئی ہیں اور اگر کانگریس چاہے تو اتحاد توڑ سکتی ہے۔

ممتا بینرجی کا کہنا ہے کہ ان کی پارٹی آئندہ ماہ اترپردیش میں ہونے والے اسمبلی انتخابات میں حصہ لے رہی ہیں اس لیے کانگریس ان سے ڈری ہوئی ہے۔

ممتا بینرجی کا جواب دیتے ہوئے کانگریس کے ترجمان ابھیشیک منوسنگھونی نے کہا کہ کانگریس کسی چیلنج سے نہیں ڈرتی۔

دلی میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا ’سوا سو سال پرانی کانگریس نہ تو کبھی کسی سیاسی چیلنج سے ڈری ہے نہ ڈرے گی۔‘

اس سے قبل کولکتہ میں ایک پریس کانفرنس میں ممتا بینرجی نے کانگریس پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ بائیں بازوں کی جماعتوں کے ساتھ مل کر مغربی بنگال میں ان کی پارٹی کے خلاف کام کررہی ہے۔

ممتا بینرجی کا کہنا ہے کہ ان کی پارٹی نے بعض قومی مسائل پر کانگریس کی کھل کر مخالفت کی تھی اس لیے کانگریس چھوٹے مسائل کو بھی بڑا کرکے پیش کررہی ہے۔

واضح رہے کہ ترنامول کانگریس پارٹی حکمراں جماعت کانگریس کی اہم اتحادی ہے۔ اس کے باوجود ترنامول کانگریس نے بیرونی ممالک کی کمپنیوں جیسے والمارٹ وغیرہ کو بھارت میں اپنے سٹورز کھولنے کی اجازت دینے پر حکومت کی مخالفت کی تھی۔

اس کے علاوہ ترنامول کانگریس مہنگائی کے مسئلے پر بھی حکومت کی تنقید کرتی رہی ہے۔

اسی بارے میں