برفباری سے شمالی بھارت میں سردی کی لہر

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کشمیر اور ہماچل پردیش میں دو دن تک برف گری ہے

بھارت میں کشمیر، ہماچل پردیش اور اتراکھنڈ کے مختلف علاقوں میں شدید برفباری کے سبب بیشتر بھارت کے شمالی علاقے سردی کی لپیٹ میں ہیں۔

شمالی ہندوستان کے بیشتر علاقوں میں شدید کی لہر کے باعد حکام کے مطابق اب تک کم سے کم دو سو افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

سردی پہلے ہی سے تھی لیکن پہاڑی علاقوں میں برفباری کے سبب تیز سرد ہوائیں چل رہی ہیں۔

دھند اور سرد ہواؤں کے باعث معمول کی زندگی بھی متاثر ہوئی ہے۔ ہریانہ اور اترپردیش کے بعض شہروں میں رات کے وقت درجہ حرارت تقریباً دو ڈگری سیلسیئس تک گر جاتا ہے۔

جواہر سرنگ کے دونوں جانب شدید برفباری سے وادی کشمیر بھارت کے دیگر حصوں سے بالکل الگ ہوگيا ہے۔ کشمیر کے اکثر علاقوں میں بجلی کی بھی شدید قلت کا سامنا ہے۔

جموں سری نگر کے نیشنل ہائي وے پر برف کے سبب تقریبا ڈیڑھ ہزار سے زیادہ ٹرک اور گاڑیاں کئی مقامات پر پھنسے ہوئے ہیں۔

Image caption زیادہ پریشانی شہر میں ان لوگوں کو ہے جو آسمان تلے رات گزارتے ہیں

ریاست پنجاب، دلی، اترپردیش اور اتراکھنڈ میں بارہ سے پندرہ کلو میٹر کی رفتار سے سرد ہوائیں چل رہی ہیں۔

دارالحکومت دہلی میں کئی روز سے بادل چھائے ہوئے تھے لیکن پیر کے روز آسمان صاف ہے اور تیز ہواؤں کے سبب کہرے سے نجات ملی ہے۔

جمعے، سنیچر اور اتوار کے روز شمالی بھارت کے کئی علاقوں میں وفقے وقفے بارشیں ہوتی رہی تھیں جس سے پورے علاقے میں سردی بڑھ گئي ہے۔

شمالی بھارت میں کہرے کی وجہ سے ریل اور دیگر ٹرانسپورٹ سروسز متاثر ہوئی ہیں۔ بہت سی پروازیں اور ریل گاڑیاں منسوخ کرنی پڑی ہیں۔

اس برس سردی کے سبب ہندوستان میں سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک دو سو چار افراد کی ہلاکت کی خبر ہے۔

اسی بارے میں