دلّی: کار بم دھماکہ، صحافی حراست میں

تصویر کے کاپی رائٹ PTI

بھارت کے دارالحکومت دلی میں پولیس نے اسرائیلی سفارتخانے کی ایک کار میں ہونے والے دھماکے کے سلسلے میں ایک بھارتی صحافی کو حراست میں لیا ہے۔

دلّی پولیس کے ترجمان راجن بھگت نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ دلی کے ایک فری لانس صحافی کو حواست میں لیا گیا ہے اور ان سے پوچھ گچھ جاری ہے۔

پولیس نے مذکورہ شخص کے متعلق کوئی تفصیل نہیں بتائی ہے۔ اس سے پہلے تفتیش میں حصہ لینے کے لیے اسرائیلی ٹیم دّلی آئي تھی۔

تیرہ فروری کو دلّی کی اورنگ زیب روڈ پر موٹو سائیکل پر سوار ایک شخص نے اسرائیلی سفارت خانے کی ایک کار میں دھماکہ خیز مواد نصب کیا تھا۔

دھماکے کے نیجے میں کار میں سوار ایک اسرائیل سفارت کار کی اہلیہ سمیت چار افراد زخمی ہوئے تھے۔

اسرائیل نے اس کے لیے ایران کو ذمہ دار ٹھہرایا تھا لیکن ایران نے اس کی سختی سے تردید کی تھی۔

اس سے قبل دلّی پولیس نے ایک بیان میں کہا تھا کہ حملہ آور کی تلاش جاری ہے۔

بھارتی حکومت نے اس دھماکے میں ملوث افراد کے بارے میں ابھی تک معلومات فراہم نہیں کی ہیں۔

لیکن ایران نے الزام لگایا تھا کہ دلی کے دھماکے میں اسرائیلی ایجنٹوں کا ہاتھ تھا۔

ایرانی حکومت کا کہنا ہے کہ اسرائیلی سفارتکار کی کار پر حملے کے لیے جس طرح کے مقناطیسی بم کا استعمال کیا گیا وہ اسی طرح کا بم تھا جس طرز کا بم تہران میں کئی ایرانی جوہری سائنسدانوں کو ہلاک کرنے میں استعمال ہو چکا ہے۔