’سازش کرنے والوں کو بخشنا نہیں چاہیے‘

Image caption امریکہ جب بھی حافظ سعید کے خلاف کارروائی کرے بھارت اس سے قطعی طور پر مطمئن ہے:کرشنا

بھارت نے پاکستان میں جماعت الدعوہ کے امیر حافظ سعید کی تلاش کے لیے امریکی حکومت کی طرف سے انعام کے اعلان کا خیر مقدم کیا ہے۔

امریکہ نے کالعدم تنظیم لشکرِ طیبہ کے بانی اور جماعت الدعوہ کے امیر حافظ سعید کی تلاش میں مدد دینے پر ایک کروڑ ڈالر کا انعام مقرر کیا ہے۔

بھارتی وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا نے منگل کو دلی میں صحافیوں سے بات چیت میں کہا کہ بھارت تو پہلے ہی سے حافظ سعید کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتا رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا ’بھارت امریکی حکومت کی طرف سے نوٹیفیکیشن اور انعام کے اعلان کا خیر مقدم کرتا ہے۔ ممبئی حملوں کا ارتکاب کرنے والوں کو سزا دلانے کے لیے دونوں ملک کافی عرصے سے کوشش کرتے رہے ہیں‘۔

بھارتی وزیر خارجہ نے کہا کہ حالیہ برسوں میں دہشت گردی کے خلاف مشترکہ لڑائی میں ’بھارت اور امریکہ بہت قریب آئے ہیں کیونکہ دونوں ہی دہشتگردی سے متاثر ہوتے رہے ہیں اور بھارت تو بار بار ہوتا رہا ہے‘۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ’میں اس وقت یہی کہنا چاہتا ہوں کہ امریکہ جب بھی حافظ سعید کے خلاف کارروائی کرے بھارت اس سے قطعی طور پر مطمئن ہے۔ کیونکہ ہم اس بات پر زور دیتے رہے ہیں کہ ممبئی حملے کے پیچھے انہی کا ذہن تھا اور دہشت گردی کے لیے سازش کرنے والوں کو بخشا نہیں جانا چاہیے‘۔

ایس ایم کرشنا نے کہا کہ جب بھی پاکستان کے ساتھ دوطرفہ بات چیت کا موقع ملا بھارت یہ مسئلہ پاکستان کے ساتھ اٹھاتا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی حکومت کے اس قدم سے لشکر طیبہ، اس کے ارکان اور معاونین کو یہ پیغام بھی جاتا ہے کہ عالمی برادری دہشت گردی کے خلاف لڑائی کی اپنی کوششوں میں متحد ہے۔

اسی بارے میں