جھارکھنڈ: ماؤ نواز باغیوں کے ساتھ جھڑپیں

بھارت کی مشرقی ریاست جھارکھنڈ میں سکیورٹی فورسز اور ماؤ نواز باغیوں میں جھڑپیں ہوئیں ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ضلع لیتھار میں ہونے والی ان جھڑپوں میں ایک سکیورٹی اہلکار ہلاک اور دو پولیس اہلکار زخمی ہو گئے ہیں۔

پولیس کے مطابق ایسا لگتا ہے کہ ان جھڑپوں میں ہلاک ہونے والے چھ عسکریت پسندوں کی لاشوں کو ماؤ نواز باغی اپنے ساتھ لے گئے ہیں۔

بھارت کی کئی ریاستوں میں ماؤ نواز باغی سرگرم ہیں۔ گزشتہ ماہ ریاست مہاراشٹرا میں مبینہ طور پر ماؤ نواز باغیوں کی جانب سے بچھائی گئی بارودی سرنگ کے دھماکے میں پندرہ پولیس اہلکار ہلاک ہو گئے تھے۔

بھارت کے وزیراعظم من موہن سنگھ کئی مرتبہ یہ کہہ چکے ہیں کہ ملک کی داخلی سلامتی کو سب سے بڑا خطرہ ماؤنواز باغیوں سے ہے اور وزیر داخلہ پی چدمبرم نے بھی کہہ چکے ہیں کہ دہشت گردوں کی سرگرمیوں کے مقابلے میں ماؤنواز باغیوں کے حملوں میں کہیں زیادہ لوگ ہلاک ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں