بھارت: لوک پال بل پھر التوا میں

آخری وقت اشاعت:  منگل 22 مئ 2012 ,‭ 22:26 GMT 03:26 PST

بھارت میں بدعنوانی پر قابو پانے کے لیے لوک پال ادارے کے قیام کا بل ایک بار پھر التوا میں چلا گیا ہے۔

اس بل پر سیاسی جماعتوں میں اتفاق رائے نہ ہونے کے سبب اسے پارلیمنٹ کی سلیکٹ کمیٹی کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

لوک پال بل گزشتہ بیالیس برس سے پارلیمنٹ میں پیش ہوتا رہا ہے لیکن یہ کسی نہ کسی وجہ سے آج تک منظور نہ ہو سکا۔

بد عنوانی کے خلاف تحریک چلانے والے بزرگ رہنما انا ہزارے نے کہا ہے کہ سیاسی رہنما ملک سے بد عنوانی کا خاتمہ نہیں کرنا چاہتے۔

دلیّ میں بی بی سی کے نامہ نگار شکیل اختر لوک پال بل لوک سبھا میں پہلے ہی منظور ہو چکا ہے اور پیر کو اسے راجیہ سبھا یعنی یعنی ایوان بالا میں پیش کیا گیا۔ لیکن اس پر بحث کرنے کے بجائے اسے ایک سلیکٹ کمیٹی کے حوالے کرنے کا فیصلہ کیا جو اپنی سفارشات اور ترامیم آئندہ پارلمیانی اجلاس میں پیش کرے گی۔

بی جے پی کے رہنما ارون جیٹلی نے بل کو سلیکٹ کمیٹی کے حوالے کرنے کے طریقۂ کار کی مخالفت کی۔ انہوں نے کہا کہ بدعنوانی کے خلاف اس بل کے حوالے سے پورے پارلیمانی ادارے کی ساکھ داؤ پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’لوک پال بل بیالیس برس سے پارلیمنٹ میں پیش ہوتا رہا ہے اورہم اسے التوا میں ڈالتے رہے ہیں‘۔

بدعنوانی کے خلاف تحریک چلانے والے بزرگ رہنما انا ہزارے نے بل کے التوا پر مایوسی کا اظہار کیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ’ سیاسی جماعتیں بدعنوانی کے خلاف سنجیدہ نہیں ہیں۔ بیالیس برس میں آٹھ بار یہ بل پیش کیا گیا لیکن یہ منظور نہیں ہوا۔ سیاسی جماعتیں اسے منظور نہیں کرنا چاہتیں۔‘

انہوں نے کہا کہ حکومت اور سیاسی جماعتیں بدعنوانی کے سوال پر ملی ہوئی ہیں۔

’بی جے پی کے رہنا ایڈووانی نے ابھی بدعنوانی خلاف رتھ یاترا نکالی تھی لیکن وہ خود بی جے پی کے اقتدار والی ریاستوں میں بھی محتسب کا ادارہ قائم نہیں کر رہے ہیں ۔‘

انا نے اعلان کیا ہے کہ وہ آئندہ جون سے ایک بار پھر لوک پال بل کے قیام کے لیے ملک گیر تحریک شروع کریں گے ۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔