حیدرآباد: طوفانی بارش، نو ہلاک متعدد زخمی

حیدرآباد
Image caption حیدر آباد میں بارش کے سبب شہر میں عام زندگی مفلوج ہوگئی ہے

بھارتی ریاست آندھرا پردیش کے دارالحکومت حیدرآباد میں مسلسل دو روز سے جاری طوفانی بارش کے سبب نو افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

حیدرآباد میں جمعہ کی دوپہر بارش شروع ہوئی تھی جو پوری رات جاری رہی۔

پولیس کے مطابق بارش سے کچھ پرانی اور کمزور عمارتیں منہدم ہوگئیں جس کی وجہ سے ہلاکتیں ہوئیں۔

حیدرآباد کے ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ بال نگر کے علاقے میں ایک فیکٹری کی دیورار گر جانے سے پانچ مزدور ہلاک ہو گئے۔ ہلاک ہونے والوں میں تین کا تعلق ریاست مدھیہ پردیش سے ہے۔

ادھر حفیظ پیٹ کے علاقے میں ایک گھر کی دیوار گر گئی جس میں ایک خاندان کے چار ارکان ہلاک ہو گئے۔ مرنے والوں میں ایک خاتون اور تین بچے شامل ہیں۔

حیدر آباد میں بارش کے سبب شہر میں عام زندگی مفلوج ہوگئی ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق جمعہ کو حیدرآباد میں بارہ سینٹی میٹر بارش ہوئی ہے جو ایک ریکارڈ ہے۔

جمعہ کو شروع ہونے والی بارش کے سبب شہر کے نچلے علاقوں میں پانی بھر گیا تھا جس کی وجہ سے کئی اہم شاہراؤں اور سڑکوں پر پانی بھر جانے سے ٹریفک متاثر ہوئی۔

واضح رہے کہ اس وقت شمالی بھارت میں بارش کا اتنظار ہے اور خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ اگر جلد ہی بارش نہیں ہوئی تو خشک سالی کی صورتحال نہ پیدا ہوجائے۔

دلی اور اس کے آس پاس کے علاقوں اور شمالی بھارت کے بعض علاقوں میں ایک ہفتے پہلے تھوڑی بارش ہوئی تھی۔

اسی بارے میں