موہالی: انورادھا بالی عرف فضاء کی ہلاکت

تصویر کے کاپی رائٹ b
Image caption فضا اور چندر موہن نے دلی میں شادی کا اعلان کیا تھا

بھارت کی ریاست ہریانہ کے سابق نائب وزیراعلیٰ چندر موہن کی کی سابق اہلیہ انورادھا بالی عرف فضا محمد موہالی میں اپنی رہائش گاہ پر مردہ پائی گئی ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ موہالی کے سیکٹر اڑتالیس میں واقع ان کے گھر سے ان کی لاش بر آمد ہوئی ہے۔

ابتدائی طور پر یہ کہا گيا تھا کہ فضاء نے خودکشی کی ہوگي لیکن پولیس کا کہنا ہے کہ بظاہر ایسا لگتا ہے لیکن تفتیش سے پہلے کچھ بھی کہنا درست نہیں ہوگا۔

انہیں کی رہائش سے متصل رہنے والے فضاء کے ایک چچا نے ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ ہمسائے سے بدبو آنے کے بعد انہوں نے جب کمرہ کھولا تو ان کی موت کا پتہ چلا۔

ان کا کہنا تھا کہ لاش اتنی خراب ہوچکی تھی کہ اس سے بدبو آنے لگی تھی۔

فضا کا پیدائشی نام انورادھا بالی ہے۔ چند برس قبل انہوں نے ہریانہ کے سابق وزیراعلی بھجن کے لال کے بیٹے اور ریاست کے سابق نائب وزیراعلی چندر موہن کے ساتھ دلی میں شادی کی تھی۔

شادی کے بعد دلی میں ایک بڑی پریس کانفرنس میں دونوں نے اس کا اعلان کیا تھا اور تب یہ معاملہ کئی روز تک سرخیوں میں رہا تھا۔

چونکہ چندر موہن پہلے سے ہی شادی شدہ تھے اس لیے بطور ہندو وہ دوسری شادی نہیں کر سکتے تھے اس لیے دونوں نے مذہب تبدیل کر کے مسلمان ہوگئے تھے۔

اسلام قبول کرنے کے بعد چند موہن نے اپنا نام چاند محمد اور انورادھا نے اپنا نام فضاء محمد رکھ لیا تھا۔ لیکن یہ رشتہ زیادہ دن نہیں چلا اور چندر موہن نے انہیں چھوڑ کر دوبارہ اپنی پرانی بیوی کے پاس چلے گئے تھے۔

فضاء ریاستی حکومت میں سینیئر افسر تھیں لیکن اس شادی کے بعد ان کی ملازمت بھی چلی گئي تھی۔ پیشہ سے وہ وکیل تھیں۔

ازدواجی رشتہ میں ناکامی کے بعد سے وہ کافی پریشان رہتی تھیں اور اس سے پہلے بھی انہوں نے ایک بار خود کشی کی کوشش کی تھی۔

اسی بارے میں