بھارت میں اگلے برس سے رومنگ فیس ختم

آخری وقت اشاعت:  پير 24 ستمبر 2012 ,‭ 13:06 GMT 18:06 PST
وفاقی وزیر مواثلات کپل سبّل

وفاقی وزیر نے یہ رومنگ چارـم کے خاتمے پر یہ بات دلی میں انٹرنیٹ گورننس پر ہونے والے سیمینار کے دوران بتائی

بھارت میں مواصلات کے مرکزی وزیر کپل سبّل نے اعلان کیا ہے کہ موبائل فون کو علاقے سے باہر لے جانے پر جو رومنگ فیس پڑتی تھی اسے اگلے برس سے ختم کر دیا جائےگا۔

ؤمیر دارالحکومت دلی میں جاری ایک انٹرنیٹ گورنینس پر سیمینار میں شریک تھے اور انہوں نے وہاں صحافیوں سے بات چیت میں یہ اعلان کیا۔

بھارت میں اب بھی موبائل فون پر آنے والی کال ایک خاص علاقے تک ہی مفت ہے اور دوسرے علاقے میں جانے پر فون کرنے یا کال لینے کے لیے اضافی رومنگ چارجز لگ جاتی ہیں۔

مواصلات سے متعلق نئی پالیسی میں رومنگ چارجز ختم کرنے کی سفارش کی گئی تھی۔ اس سے متعلق جب مسٹر سبل سے سوال کیا گيا تو انہوں نے کہا ’رومنگ فیس اگلے برس سے نہیں ادا کرنی ہوگی۔‘

اس پالیسی کے نفاذ سے فون صارفین ایک علاقے سے دوسرے علاقے میں جانے پر بغیر کسی اضافی رقم کی ادائیگی کے بغیر وہ اپنا وہی نمبر استعمال کر سکیں گے۔

بھارت میں ٹیلی کام سیکٹر ایک بڑا بازار ہے جس میں ملکی اور بیرونی کمپنیاں بزنیس کرتی ہیں۔ رومنگ فیس کے خاتمے سے سب سے زیادہ فائدہ عوام کو ہوگا۔

ٹیلی مواصلات کے شعبہ میں ٹوجی بد عنوانی معاملہ ایک بڑا واقعہ ہے جس کے بعد عدالت نے سپیکٹرم کی نیلامی کی بات کی ہے۔

محکمے کے سیکریٹری چندر شیکھر کا کہنا ہے کہ محکمہ سپیکٹرم کی نیلامی کی نوٹس پر کام کر رہا ہے جسے جلدی ہی جاری کیے جانے کی توقع ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔