کشمیر میں جھڑپ، دو عسکریت پسند ہلاک

آخری وقت اشاعت:  اتوار 21 اکتوبر 2012 ,‭ 14:01 GMT 19:01 PST
کشمیر پولیس

کشمیر میں حالیہ دنوں میں تشدد میں اضافہ ہواہے۔

بھارت کے زیر انتظام کمشیر کے شمجالی علاقے سوپور قصبے میں سکیورٹی فورسز کےساتھ چوبیس گھنٹوں تک جاری رہنے والے مسلح جھڑپ میں دو عسکریت پسند ہلاک ہوگئے ہیں۔

جھڑپ کے دوران ایک رہائشی مکان تباہ ہوگیا ہے جبکہ اس کے پڑوس میں بھی کچھ مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔

جھڑپ کی تفصیلات دیتے ہوئے سوپور کے پولیس سربراہ امتیاز حسین نے بی بی سی کو بتایا کہ ’ہمیں خفیہ ذرا‏ئع سے اطلاع ملی تھی کہ مشتاق احمد شاہ کے مکان میں لشکر طیبہ کے کمانڈر مذمل امین اپنے ساتھی کے ہمراہ چھپے بیٹھے ہیں۔ ہم نے فوج اور سکیورٹی فورسز کے ہمراہ آپریشن شروع کیا۔ ابتدائی کارروائی میں ہمارا ایک افسر اور دو جوان زخمی ہوگئے۔‘

پولیس افسر کا مزید کہنا تھا کہ مقامی لوگوں کو حفاظت کے ساتھ بستی سے باہر نکالنے کی وجہ سے آپریشن میں تاخیر ہوئی۔

پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ مزمل امین اور ان کے ساتھی عبداللہ شاہین کا تعلق عسکری گروہ لشکر طیبہ کے ساتھ ہے۔

یہ تصادم سرینگر سے شمال کی جانب پچپن کلومیٹر دُور سوپور کی شالہ پورہ بستی میں ہوا۔ وہاں کے رہائشی غلام حسن نے بتایاکہ’سنیچر کی شام چار بجے جب گولیوں کی آوازیں آئیں تو سوپور بازار بند ہوگیا۔ لوگ اپنے گھروں میں یرغمال ہوگئے۔‘

واضح رہے کہ کشمیر میں پچھلے چند ہفتوں سے مسلح تشدد میں اضافہ ہوا ہے۔

جمعہ کو مضافاتی علاقے لسجن میں بھی فائرنگ کا ایک واقعہ ہوا جس میں ایک شہری کی موت ہوگئی تھی۔

پولیس نے دعویٰ کیا کہ عسکریت پسندوں نے فوجی گاڑی پر فائرنگ کے بعد نزدیک ہوٹل میں پناہ لینے کی کوشش کی تو وہاں کے ملازموں نے مزاحمت کی۔

پولیس کے مطابق عسکریت پسندوں نے ہوٹل کی لابی میں ملازمین پر فائرنگ کی جس میں ہوٹل کا ایک ملازم مارا گیا جبکہ دو زخمی ہوگئے۔ تاہم بعد میں لشکر طیبہ کے ترجمان نے اس دعوے کی تردید کی۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ عسکریت پسندوں نے صرف فوجی گاڑی کو نشانہ بنایا تھا۔

دریں اثناء پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ جنوبی کشمیر کے کولگام ضلع میں عسکریت پسندوں کی ایک کمین گاہ کو ناکارہ بنا دیا گیا جس میں سے بھارتی مقدار میں اسلحہ اور گولی بارود برآمد ہوا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔