بھارت: مدیحہ گوہر کا ڈرامہ منسوخ

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 17 جنوری 2013 ,‭ 15:37 GMT 20:37 PST

پاکستانی اداکارہ اور اجوکا تھیٹر کی فنکارہ مدیحہ گوہر کے بھارت میں ہونے والے سٹیج ڈرامے کو منسوخ کر دیا گیا ہے۔

مدیحہ گوہر جو آج کل بھارت میں ہیں اور سعادت حسن منٹو پر ایک ڈرامہ ’کون ہے یہ گستاخ‘ پیش کرنے والی تھیں۔

بی بی سی ہندی کے نامہ نگار کے مطابق ان کا یہ ڈرامہ جے پور میں بھارت رنگ مہوتسو میں انیس جنوری کو پیش کیا جانا تھا جس کے بارے میں انہیں انتظامیہ نے بتایا کہ اسے ناگزیر وجوہات کی بنا پر منسوخ کیا گیا ہے۔

اس ڈرامے کو سنیچر کو بھی پیش کیا جانا تھا اور اسے بھی منسوخ کر دیا گیا ہے۔

ایک اور پاکستانی تھیٹر گروپ نے جمعرات کو اپنا ڈرامہ منٹو رامہ بھی پیش کرنا تھا جسے بھی منسوخ کر دیا گیا۔

مدیحہ یہ ڈرامہ پیش کرنے بدھ سولہ جنوری کو جے پور پہنچی تھیں لیکن ڈرامہ شروع ہونے سے دو گھنٹے قبل اسے منسوخ کر دیا گیا۔

انتظامیہ کے انکار کے بعد مدیحہ جے پور سے واپس دلی پہنچ چکی ہیں جہاں انہوں نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’آج جب سب سے زیادہ منٹو کی آواز سننے کی ضرورت ہے تو اسے اس طرح کے حکم ناموں سے دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔‘

مدیحہ گوہر کے مطابق ’پاکستان میں فنون کے لیے جگہ پہلے ہی کم ہے اور بھارت کو اس کمی سے سبق سیکھنا چاہیے اور اپنے ہاں اسے کم نہیں کرنا چاہیے۔‘

انہوں نے مزید کہا ’ہم فنکار امن کا پیغام لے کر آتے ہیں اور ہمارا کوئی کاروباری مقصد نہیں ہوتا ہے۔ جو امن کا سفر دونوں ملک طے کر رہے ہیں اس کا اصل چہرہ ہم ہی لوگ ہیں۔‘

ایم کے رائنا جو ہندوستان میں فن کی دنیا کی بڑی شخصیت ہیں نے اس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’ضرور اس کے پسِ پردہ کوئی نہ کوئی سرکاری دباؤ ہو گا‘۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔