گڈ کری مستعفی، راج ناتھ بی جے پی کے نئے صدر

آخری وقت اشاعت:  بدھ 23 جنوری 2013 ,‭ 04:24 GMT 09:24 PST

نتین گڈکری ایک صنعت کار ہیں اور ان کی کمپنی کے خلاف بدعنوانی کے کئی معاملات کی تفتیش بھی ہو رہی ہے

بھارت میں حزب اختلاف کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر کے انتخاب سے ایک روز قبل پارٹی کے صدر نتین گڈ کری نے اچانک اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے جن کی جگہ پر راج ناتھ سنگھ کو متفقہ طور پر نیا صدر نامزد کیا گیا ہے ۔

نتین گڈ کری دوسری مرتبہ صدر کے عہدے کے لیے کھڑے ہونے والے تھے اور انہیں آر ایس ایس کی مکمل حمایت حاصل تھی ۔

نتین گڈکری ایک صنعت کار ہیں اور ان کی کمپنی کے خلاف بدعنوانی کے کئی معاملات کی تفتیش بھی ہو رہی ہے ۔ پیر کو بھی انکم ٹیکس کے محکمے نے ان کی بعض کمپنیوں سے غیر قانونی طور پر لین دین کے سلسلے میں پوچھ گچھ کی تھی ۔ اسی طرح کی کئی وجوہات کی بنا پر گڈ کری کو دوبارہ صدر منتخب کیے جانے کے سوال پر پارٹی کے اندر اختلافات بڑھتے جا رہے تھے ۔

پیر کی شب اپنے استعفے کا اعلان کرتے ہوئے گڈکری نے کہا ’میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا ہے لیکن کانگریس کی حکومت میرے پیچھے پڑی ہوئی ہے ۔ میں نہیں چاہتا کہ میری جماعت کو کسی طرح کا نقصان پہنچے ۔اس لیے میں نے اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا فیصلہ کیا ہے ۔‘

"سابق صدر نتین گڈکری آر ایس ایس سے بہت قریب سمجھے جاتے ہیں ۔ آر ایس ایس کے تعلقات گجرات کے وزیر اعلی نریندر مودی سے اچھے نہیں رہے ہیں ۔ مودی اور گڈکری کے درمیان بھی اس نوعت کے تعلقات نہیں تھے جو ایک وزیر اعلی کے اپنی پارٹی کے صدر سے ہونے چاہیئں ۔ مسٹر گڈکری کا پارٹی کے محور سے ہٹنا مودی کے لیے فائدہ مند ثابت ہو گا۔"

دلی میں بی بی سی کے نامہ نگار شکیل اختر

دلی میں پیر کی رات آر ایس ایس اور بی جے پی کے سینیئر رہنماؤں کی موجودگی میں راج ناتھ سنگھ کو صدر نامزد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ وہ منگل کی صبح بی جے پی کے صدر دفتر میں صدر کے عہدے کے لیے اپنے کاغزات نامزدگی داخل کریں گے ۔ ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ پارٹی کا کوئی اور رہنما صدر کے عہدے کے لیے انتخاب لڑے گا یا نہیں ۔ بی جے پی میں عموماً صدر کو متفقہ طور پر منتخب کرنے کی روایت رہی ہے۔

نریندر مودی دو ہزار چودہ کے پارلیمانی انتخاب میں حزب اختلاف کے وزارت عظمی کے امیدوار کے طور پر آگے آنے کا ارادہ رکھتے ہیں ۔ بہت سے مبصرین بی جے پی کے اندر قیادت کی رسہ کشی کو مودی کے مخالفین اور حامیوں کی کشمکش سے تعبیر کر رہے ہیں ۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔