افضل گورو کی قبر کا کتبہ ہٹانے پر احتجاج

آخری وقت اشاعت:  بدھ 13 فروری 2013 ,‭ 15:35 GMT 20:35 PST
افضل گورو کی قبر کا مقام

افضل گورو کے خاندان والے حکومت ہند سے مطالبہ کررہے ہیں کہ وہ ان کا جسد خاکی ان کے حوالے کرے

بھارتی پارلیمان پر حملے کی مبینہ سازش کے لیے نو فروری کی صبح پھانسی کی سزا پانے والے افضل گورو کے لیے بعض نوجوانوں نے سرینگر کے مزارِ شہدا میں ایک قبر مختص کی تھی جس پر ان کے نام کا کتبہ لگایا گیا تھا، لیکن بدھ کو نیم فوجی دستوں نے مزارِ شہدا کا محاصرہ کر لیا اور مزار میں لوگوں کے داخلے پر پابندی عائد کردی۔

سرینگر کے شمالی علاقے عیدگاہ میں واقع مزار شہدا کے باہر موجود سی آر پی ایف اہلکاروں نے بی بی سی کو بتایا: ’حکومت نے داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔‘ محاصرے سے ذرا دور موجود بعض نوجوانوں نے بتایا کہ پولیس اہلکاروں نے راتوں رات کتبہ ہٹالیا تھا۔

واضح رہے 28 سال قبل تہاڑ جیل میں پھانسی کے بعد دفن کیے جانے والے مقبول بٹ کے لیے بھی اسی مزارِ شہدا میں ایک قبرمخصوص ہے جس پر ان کے نام کا کتبہ ہے۔

اس قبر کے بغل میں افضل گورو کی قبر مخصوص کی گئی تھی۔ ان کے کتبے پر لکھا تھا: ’شہید وطن افضل گورو کا جسد خاکی حکومت ہند کے پاس امانت ہے۔‘

کتبہ ہٹانے کی خبر پھیلتے ہی سرینگر کے کئی علاقوں میں احتجاجی مظاہرے ہوئے۔ بعد ازاں پولیس کے اعلیٰ پولیس افسر نے بتایا کہ امن و قانون کی صورتحال بحال رکھنے کے لیے کتبہ کچھ دیر کے لیے ہٹالیا گیا تھا لیکن بعد میں اسے بحال کیا گیا۔ لیکن مزار شہدا ابھی بھی محاصرے میں ہے۔

کتبہ ہٹائے جانے پر افضل گورو کے بھائی یٰسین گورو نے بتایا: ’ایک طرف حکومت ہند جیل میں فاتحہ خوانی کی پیشکش کرتی ہے اور دوسری طرف افضل کی قبر کی بے حرمتی کی جارہی ہے۔ یہ تو دوہرا معیار ہے۔‘ تاہم یٰسین گورو نے اس مطالبے کا اعادہ کیا کہ لواحقین صرف افضل گورو کی باقیات کی واپسی چاہتے ہیں۔

افضل گورو کی پھانسی کی سزا کے بعد کشمیر میں اب بھی بعض مقامات پر کرفیو جاری ہے اور کئی مقامات پر اخبارات بھی شائع کیے گئے ہیں۔

افضل گورو کو نو فروری کی صبح اچانک پھانسی دے کر دلی کی تہاڑ جیل میں ہی دفن کر دیا گیا تھا۔

افضل گورو کا خاندان حکومت ہند سے ان کے جسد خاکی کا مطالبہ کررہی ہے، لیکن حکومت ہند کا کہنا ہے کہ اگر وہ چاہیں تو تہاڑ جاکر افضل گورو کی قبر پر فاتحہ پڑھ سکتے ہیں۔ افضل گورو کے لواحقین نے حکومت کی اس پیش کش کو قبول کرنے سے انکار کردیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔