’ویزے کی مشکلات سیاحوں کو راغب کرنے کی راہ میں بڑی رکاوٹ‘

عطا آباد جھیل تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بیرونِ ملک سے پاکستان کی سیاحت کے لیے آنے والے سیاحوں کے لیے سب سے بڑا مسئلہ پاکستان کی جانب سے ویزوں کے اجرا میں تامل ہے

عالمی سطح پر پاکستان کی شبیہ بہتر بنانے کے لیے اور سیاحت کے مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے ملک کی پہلی سیاحتی نمائش اس سال نومبر میں منعقد کی جائے گی جس میں پاکستان بھر سے اس صنعت سے وابستہ افراد اور ادارے شرکت کریں گے۔

پاکستان ٹریول مارٹ کے منتظمین کے مطابق حکومتِ سندھ نے بھی اس ضمن میں تعاون کی یقین دہانی کروائی ہے۔

پاکستان میں امنِ عامہ کی بہتر ہوتی ہوئی صورتِ حال اور پاکستان چین اقتصادی راہداری منصوبے کے تناظر میں معاشی بہتری کی امید پیدا ہوئی ہے جس کے بعد ملک میں سیاحت کو فروغ دینے کے لیے بھی اقدامات کیے جارہے ہیں۔

بخاری گروپ کے ڈائریکٹر مارکیٹنگ عارف ملک کے مطابق پاکستان کے علاوہ مشرقِ وسطٰی، ایشیائے کوچک اور مشرقِ بعید کے ممالک سے بھی سیاحت کی صنعت سے وابستہ ادارے اس نمائش میں شرکت کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی مقامی سیاحتی صنعت کو بھی فروغ کی ضرورت ہے کیونکہ پاکستان میں شمال اور جنوب کے درمیان بہت فاصلہ ہے جیسے شمالی علاقہ جات کے بہت سے افراد نے سمندر اور جنوبی علاقوں کے لوگوں نے پہاڑ نہیں دیکھے اور اس سلسلے میں ان کے درمیان پُل بنانے کی بھی ضرورت ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پاکستان سے باہر 30 فیصد افراد مذہبی سیاحت جیسے حج، عمرہ اور زیارت کے لیے سفر کرتے ہیں اور اس طرح کی نمائش سے انہیں بھی فائدہ ہوگا اور ان کے پاس زیادہ مواقع ہوں گے۔

عارف ملک کے مطابق ابتدائی طور پر ان کی زیادہ توجہ مقامی سیاحت پر مرکوز ہوگی اور یہ نمائش ہر سال ہوا کرے گی تو اس میں بتدریج مختلف چیزیں شامل ہوتی جائیں گی۔

بیرونِ ملک سے پاکستان کی سیاحت کے لیے آنے والے سیاحوں کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ اس وقت سب سے بڑا مسئلہ پاکستان کی جانب سے ویزوں کا اجرا ہے۔

ان کے مطابق پاکستان کی حکومت اس وقت ویزے جاری کرنے میں بہت تامل سے کام لے رہی ہے اور اس سلسلے میں وفاقی حکومت سے بات کی جا رہی ہے۔

پاکستان میں بدھ مت اور سکھ مذہب کے متعدد مذہبی مقامات کی وجہ سے پاکستان میں ان مذاہب کے پیروکاروں کی مذہبی سیاحت کے لیے آمد پر ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے موجودہ حالات میں ابھی اس پر کام نہیں ہوسکتا حالانکہ یہ ایک بہت بڑا شعبہ ہے مگر ان حالات میں مشکلات بہت ہیں۔