Got a TV Licence?

You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.

Find out more
I don’t have a TV Licence.

خلاصہ

  1. پاکستان کی سپریم کورٹ نے پاناما دستاویزات کے بارے میں پاکستانی وزیراعظم نواز شریف سمیت چھ افراد کی نااہلی سے متعلق درخواستوں پر فیصلہ سنا دیا ہے
  2. سپریم کورٹ نے اپنے اکثریتی فیصلے میں ایک ہفتے میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دینے کا حکم دیا ہے جو دو ماہ میں رپورٹ پیش کرے گی
  3. پانچ رکنی بینچ میں سے تین ججوں نے 540 صفحات کے فیصلے میں تحقیقات کا حکم دیا جبکہ بینچ کے سربراہ جسٹس آصف کھوسہ سمیت دو ججوں نے اپنے اختلافی نوٹ میں وزیراعظم کو نااہل قرار دینے کو کہا۔
  4. سپریم کورٹ نے فیصلے میں وزیراعظم نواز شریف اور ان کے صاحبزادوں حسن اور حسین نواز کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا ہے

لائیو رپورٹنگ

time_stated_uk

بریکنگ’اکثریت کا فیصلہ غالب آتا ہے‘

سپریم کورٹ آف پاکستان کے احاطے میں نامہ نگار عبداللہ فاروقی سے بات کرتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ کے سابق جج اور ماہر قانون شاہ خاور نے بتایا کہ ’اِس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ فیصلے میں دو ججوں نے اختلافی نوٹ لکھا ہے کیونکہ اکثریت کا فیصلہ غالب آتا ہے۔ سپریم کورٹ آف پاکستان نے بجائے خود کوئی فیصلہ صادر کرنے کے یہ مناسب سمجھا کہ جے آئی ٹی بنائی جائے کیونکہ اِس معاملے میں اب بھی کئی پہلو تشنہ ہیں جن پر تحقیقات اور شہادتیں ریکارڈ کرنے کی ضرورت ہے‘۔

بریکنگفیصلے میں مریم نواز کا ذکر کیوں نہیں؟

مریم نواز
Getty Images

پاناما لیکس پر سپریم کورٹ کے اکثریتی فیصلے کے پیراگراف 14 میں کہا گیا ہے کہ عمران خان کے وکیل نعیم بخاری نے تسلیم کیا ہے کہ ان کے موکل کی جانب سے دی گئی درخواستوں میں مریم نواز کے خلاف کسی فیصلے کا مطالبہ نہیں کیا ہے لیکن انھی درخواستوں میں وہ بضد رہے کہ مریم نواز اپنے والد کے زیر کفالت تھیں اور ابھی بھی ہیں۔ 

بریکنگججوں کے فیصلے پر آئین و قانون کے مطابق عمل کریں گے: مریم اورنگزیب

 پاناما لیکس پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد وفاقی وزیرِ مملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے بی بی سی اردو کے نامہ نگار شہزاد ملک کو بتایا ہے کہ ججز نے جو بات کی ہے قانون اور آئین کے مطابق اس پر عمل کیا جائے گا۔  

ججوں کے فیصلے پر آئین و قانون کے مطابق عمل کریں گے: مریم اورنگزیب

’فی الحال اگر نواز لیگ خوشیاں منا رہی ہے تو حق بجانب ہے‘

تجزیہ نگار طلعت حسین نے نامہ نگار شمائلہ خان سے بات کرتے ہوئے کہا ’یہ کوئی قانونی کیس تو تھا نہیں بنیادی طور پر پی ٹی آئی ایک سیاسی کیس لڑ رہی تھی۔ آج توقع ان کی یہ تھی کہ  وزیرِ اعظم فیصلے کے بعد وزیرِ اعظم رہیں گے۔ اب وہ جوں کے توں وزیرِ اعظم موجود ہیں۔ اس لیے ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ نواز لیگ سیاسی طور پر جیت نظر آتی ہے’۔

’قانونی طور پر عدالت نے ایک انویسٹی گیشن کا دائرہ کار طے کیا ہے۔ اُس انویسٹی گیشن کے ذریعے ہم حتمی طور پر ثابت کریں گے کہ پیسے نواز شریف کے خاندان نے کیسے باہر بھیجے اور جائیداد کیسے بنائیں۔ وہ ایک لمبا عمل ہے۔ اُس میں سے کیا نکلے گا، یہ تو بعد کی بات ہے۔ فی الحال اگر نواز لیگ خوشیاں منا رہی ہے تو حق بجانب ہے‘۔ 

panama
BBC

بریکنگ’میاں نواز شریف صادق اور امین نہیں رہے‘

آصف فاروقی کے مطابق پاناما مقدمے میں اکثریتی فیصلے سے اختلاف کرنے والے عدالت عظمیٰ کے دو جج صاحبان نے وزیراعظم میاں نواز شریف کو بد دیانتی اور خیانت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے انہیں وزارت عظمیٰ کے عہدے کے لیے نا اہل قرار دیا ہے۔

جسٹس دوست محمد کھوسہ اور جسٹس گلزار احمد نے اپنے اختلافی نوٹ میں کہا ہے کہ میاں نواز شریف اپنے مالی معاملات اور لندن کی جائیداد کے بارے میں اس عدالت کے سامنے غلط بیانی کے مرتکب ہوئے ہیں اس لیے وہ صادق اور امین نہیں رہے۔

دونوں جج صاحبان نے الگ الگ فیصلوں میں اسی بنا پر نواز شریف کو وزیراعظم کی حیثیت سے کام کرنے سے روکنے کا حکم جاری کیا ہے۔ 

panama
Reuters

’جو سپریم کورٹ نہیں کر سکی کیا وہ 19 گریڈ کے افسر کریں گے؟‘

پاناما
AFP

پاناما کیس کا فیصلہ آنے کے بعد پاکستان پیپلز پارٹی کے آصف علی زرداری نےوزیر اعظم نواز شریف سے استعفیٰ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ایک پریس کانفرنس میں آصف علی زرداری نے سوال کیا کہ جو سپریم کورٹ نہیں کر سکی کیا وہ 19 گریڈ کے افسر کریں گے؟

انھوں نے کہا ’یہ نااہل حکومت ہے اور نہ اس سے ملک چلتا ہے۔ انھیں کوئی پرواہ نہیں اور اپنے مزے کے علاوہ کچھ خیال نہیں ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ان کی سمجھ سے بالاتر ہے کہ کس بات کی مٹھائی بانٹی جا رہی ہے۔

آصف علی زرداری نے مزید کہا کہ پی پی پی کا موقف رہا ہے کہ ججوں سے انصاف نہیں ملا۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ میاں نواز شریف کا صحیح چہرہ سب کے سامنے آ گیا ہے اور وہ اتنے صاف ہیں نہیں جتنا بنتے ہیں۔ ’آپ دودھ والے سے پوچھیں، آپ مج والے سے پوچھیں تو وہ ایک ہی بات کریں گے گلی گلی میں شور ہے نواز شریف چور ہے۔‘

بریکنگپاناما کیس کا مفصل فیصلہ

بریکنگجے آئی ٹی بنانا نواز شریف کو راہِ فرار دینے کے مترادف

panama
AFP

پاکستان پیپلز پارٹی کے سینیئر رہنما اعتزاز احسن نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ دو ججوں کا فیصلہ تین ججوں سے زیادہ اہم ہے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ دو ججوں نے نواز شریف کو نااہل قرار دیا ہے جبکہ باقی تین ججوں نے اس رائے کی تردید نہیں کی۔

اعتزاز احسن نے کہا کہ دو ججز کی رائے سپریم کورٹ کی رائے سمجھی جا سکتی ہے جبکہ تین ججوں نے مایوس کیا ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا جے آئی ٹی بنانا نواز شریف کو راہِ فرار دینے کے مترادف ہے۔

بریکنگتحقیقات کی تکمیل تک نواز شریف مستعفی ہوں

عمران خان
AFP

پاکستان تحریکِ انصاف کے سربراہ عمران خان نے پاناما لیکس کے مقدمے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد وزیراعظم نواز شریف سے ایک بار پھر مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی تحقیقات مکمل ہونے تک اپنا عہدہ چھوڑ دیں۔

تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اپنی رہائش گاہ پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ آج تاریخ بنی ہے اور ایسا فیصلہ کسی وزیراعظم کے خلاف نہیں آیا جب کہ دو ججوں نے کہا ہے کہ آپ نے جھوٹ بولا ہے

ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے پاس وزارتِ عظمیٰ پر فائز رہنے کا کوئی جواز باقی نہیں رہ گیا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی تحقیقات مکمل ہونے تک نواز شریف اپنا عہدہ چھوڑ دیں اور اگر وہ 60 دن بعد بری ہو جاتے ہیں تو دوبارہ اپنے عہدے پر آ جائیں۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ خود نواز شریف نے بھی یوسف رضا گیلانی کو ایسا ہی مشورہ دیا تھا۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ وزیراعظم سے جے آئی ٹی کی تحقیقات ایسے ہی ہیں جیسے عزیر بلوچ سے تفتیش کی گئی تھی۔

عمران خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ’مٹھائیاں کس چیز کی بانٹیں جا رہی ہیں کہ سپریم کورٹ کے دو ججوں نے انھیں نااہل قرار دیا ہے اور تین ججوں نے ان کے خلاف تحقیقات کرنے کو کہا ہے۔‘

سپریم کورٹ کا فیصلہ

پاناما
AFP
  • پاکستان کی سپریم کورٹ نے پاناما دستاویزات کے بارے میں پاکستانی وزیراعظم نواز شریف سمیت چھ افراد کی نااہلی سے متعلق درخواستوں پر فیصلہ سنا دیا ہے
  • سپریم کورٹ نے اپنے اکثریتی فیصلے میں ایک ہفتے میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دینے کا حکم دیا ہے جو دو ماہ میں رپورٹ پیش کرے گی
  • مشترکہ تحقیقاتی ٹیم ہر دو ہفتے بعد اپنی پیش رفت کی رپورٹ سپریم کورٹ میں بھی پیش کرے گی
  • پانچ رکنی بینچ میں سے تین ججوں نے 540 صفحات کے فیصلے میں تحقیقات کا حکم دیا جبکہ بینچ کے سربراہ جسٹس آصف کھوسہ سمیت دو ججوں نے اپنے اختلافی نوٹ میں وزیراعظم کو نااہل قرار دینے کو کہا۔
  • سپریم کورٹ نے فیصلے میں وزیراعظم نواز شریف اور ان کے صاحبزادوں حسن اور حسین نواز کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا ہے

بریکنگ’مسلم لیگ نواز ایک بار پھر سرخرو ہوئی‘

وزیرِ مملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’مسلم لیگ نواز ایک بار پھر سرخرو ہوئی اور جھوٹے الزامات لگانے والی پارٹی عدالت سے شرمندہ ہو کر نکلی‘۔

مریم اورنگ زیب کے مطابق ’ہمارے مخالفین نے جھوٹے الزامات کا سہارا لیا جسے عدالت نے مسترد کر دیا۔‘

بریکنگ’پگڑی گر گئی پر عزت بچ گئی والی بات ہوئی ہے‘

پاناما کیس کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمینٹیرین کے سیکریٹری اطلاعات مولابخش چانڈیو نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کے خلاف جے آئی ٹی بنانا ان پر عدم اعتماد کا اظہار ہے۔

انھوں نے کہا ’سپریم کورٹ نے فیصلہ نھیں سنایا۔ ابھی تو کیس مزید چلے گا۔ اخلاقی طور پر میاں نواز شریف کو اب مزید وزیراعظم نھیں رہنا چاہیے۔ لیگی وزرا مٹھائیاں بانٹ رہے ہیں، شرم کی بات ہے۔‘

مولابخش چانڈیو نے مزید کہا کہ ’پگڑی گر گئی پر عزت بچ گئی والی بات ھوئی ہے۔ ملک کے وزیر اعظم اب ماتحت اداروں کے نمائندوں کے سامنے پیش ہوں گے۔‘

بریکنگمضبوط عدالتی کمیشن جے آئی ٹی سے بہتر ہوتا

پاناما کیس کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے پیپلز پارٹی کے سعید غنی نے کہا ہے کہ ان کا یہ موقف کہ پیپلز پارٹی کے مقابلے میں دیگر کے لیے عدلیہ کا معیار الگ ہے۔ ایک مضبوط عدالتی کمیشن مشترکہ تحقیقاتی ٹی سے بہتر ہوتا۔

Our opinion that Judiciary has different standards 4 PPP & others has stands vindicated. Strong Judicial Commission wud b better than JIT

بریکنگ’عدالت نے کہا ہے نواز شریف کا دفاع ناقابلِ قبول ہے‘

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے فیصلے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’عدالت کا کہنا ہے کہ نواز شریف کا دفاع ناقابلِ قبول ہے۔ تین ججز کہہ رہے ہیں کہ تفتیش کریں اور دو ججز کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کو نااہل قرار دیں۔ اب انھیں بتانا ہوگا کہ وزیراعظم نے کالا دھن کیسے جمع کیا۔‘

بریکنگتحقیقاتی ٹیم دو ماہ میں تحقیقات مکمل کرے

نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق فیصلے میں کہا گیا ہے کہ یہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم دو ماہ میں تحقیقات مکمل کرے اور رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کرے۔ سپریم کورٹ اس رپورٹ کی روشنی میں ایک علیحدہ بینچ تشکیل دے گی۔

بریکنگ’آج سپریم کورٹ نے سازش کو ناکام بنا دیا‘

احسن اقبال نے کہا کہ آج سپریم کورٹ نے سازش کو ناکام بنا دیا اور جو لوگ شب خون مارنا چاہتے تھے انھیں منہ کی کھانی پڑی ہے۔ ’عمران خان کے دعوے کہ ان کے پاس نواز شریف کے خلاف ثبوت ہیں انھیں عدالت نے تسلیم نہیں کیا۔ آج پاکستان کے عوام کی فتح ہوئی ہے۔ آج آئین اور قانون کی جیت ہوئی ہے۔‘

بریکنگ’نواز شریف چھ ماہ قبل کہتے تھے‘

پاکستان مسلم لیگ نواز کے رہنما خواجہ آصف نے سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہ عدالتِ عظمیٰ نے اکثریت کے ساتھ یہ فیصلہ کیا ہے جو نواز شریف نے چھ ماہ قبل کہا تھا کہ پاناما پر کمیشن بنے، تحقیقات ہوں کیونکہ ہم اس کے لیے تیار ہیں۔

’ہمارے مخالفین نے جو شہادیں عدالت میں پیش کیں وہ نا کافی تھیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ آج ہم سرخرو ہوئے ہیں۔ جو لوگ یہ خواہش رکھتے تھے کہ وہ نواز شریف کو وزارتِ عظمیٰ سے ہٹانے چاہتے تھے تو میں انھیں بتانا چاہتا ہوں کہ وزیرِ اعظم سنہ 2018 تک وزیرِ اعظم رہیں گے۔

panama
BBC

بریکنگدو ججوں کی سفارش: وزیر اعظم نواز شریف کو نااہل قرار دیا جائے

 جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزاراحمد نے اختلافی نوٹ میں وزیر اعظم نواز شریف کو نااہل قرار دینے کی سفارش کی۔ 

بریکنگ’حسن اور حسین نواز جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں‘

حسن نواز اور حسین نواز جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں: حکم

بریکنگچھ رکنی تحقیقاتی ٹیم کی تشکیل کا حکم

بی بی سی کے نامہ نگاروں کے مطابق فیصلے میں کہا گیا ہے کہ 

  • مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں ایف آئی اے کا ایک نمائندہ ہوگا جو کہ ایڈیشنل ڈائریکٹر کے عہدے سے کم کا نہیں ہوگا۔
  •  اس کے علاوہ ایک ایک نمائندہ نیب، سکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن اور سٹیٹ بینک سے ہوگا۔
  •  ان کے علاوہ آئی ایس آئی اور ایم آئی سے بھی دو تجربہ کار افسران اس کمیٹی کا حصہ ہوں گے۔ 
  • ’تمام نمائندوں کو ان کے اداروں کے سربراہان نامزد کریں گے۔
  • ان اداروں کے سربراہان سات روز میں نمائندوں کے نام بینچ کے سامنے جمع کروائیں۔

بریکنگ’مشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنانے کا حکم‘

سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق سپریم کورٹ نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنانے کا حکم دے دیا

بریکنگفیصلہ متفقہ نہیں

 جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ کا فیصلہ متفقہ نہیں۔ جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزاراحمد نے اختلافی نوٹ دیا ہے۔ 

فیصلہ جسٹس اعجاز افضل خان نے اکثریتی فیصلہ تحریر کیا ہے۔ 

بریکنگفیصلہ سنایا جا رہا ہے

 جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ پاناما کیس کا فیصلہ سنا رہی ہے۔ 

بریکنگجسٹس صاحبان کورٹ روم ون میں

جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ سپریم کورٹ کے کورٹ روم نمبر ون پہنچ گئے۔

ہم آج یومِ تشکر منائیں گے

مسلم لیگ ن کے عابد شیرعلی کی سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو

ہم آج یومِ تشکر منائیں

بریکنگ’مہذب اقوام عدالتوں کے فیصلوں کا احترام کرتی ہیں‘

  وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ مہذب اقوام عدالتوں کے فیصلوں کا احترام کرتی ہیں۔

پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف نے کہا ہے کہ وہ پاناما پیپرز سے متعلق مقدمے میں عدالت کا فیصلہ تسلیم کریں گے۔ قصور میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ مہذب اقوام عدالتوں کے فیصلوں کا احترام کرتی ہیں۔  

بریکنگآج پاکستان کی جیت ہوگی: عمران خان

سپریم کورٹ پہنچنے کے بعد تحریکِ انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا تھا کہ آج پاکستان کی جیت ہوگی۔ میری نہیں پاکستان کی جیت ہو گی۔ میچ سے پہلے ہی مبارکبادیں مل رہی ہیں

رینجرز کے ذریعے مکمل سکیورٹی

وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اسلام آباد کی انتظامیہ کو سپریم کورٹ اور ملحقہ علاقوں کی رینجرز کے ذریعے مکمل سکیورٹی یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔

انھوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کی عمارت میں صرف ان افراد کو داخل ہونے کی اجازت ہوگی جن کے پاس سپریم کورٹ کے رجسٹرار کی طرف سے جاری پاس یا سکیورٹی کارڈز ہوں گے۔وزیر داخلہ نے ہدایت کی کہ علاقے میں کسی سیاسی اجتماع یا کسی قسم کی سرگرمی کی اجازت نہیں دی جانی چاہیے۔

panama
BBC

وزیر دفاع اور پانی و بجلی خواجہ آصف بھی کورٹ روم ون پہنچ گئے۔ ان سے قبل احسن اقبال اور خواجہ سعد رفیق بھی کمرہ عدالت پہنچے۔ 

بریکنگعمران خان سپریم کورٹ پہنچ گئے

پاکستان تحریکِ انصاف کے سربراہ عمران خان پاناما کیس کا فیصلہ سننے کےلیے سپریم کورٹ پہنچ چکے ہیں۔ ان کے ہمراہ لوگوں کی بڑی تعداد آئی ہے تاہم کمرۂ عدالت میں پی ٹی آئی کے صرف انھی افراد کو داخلے کی اجازت ہے جن کے نام پہلے فراہم کیے گئے تھے۔

عمران خان
AFP

’قوم حوصلہ نہ ہارے‘

پاناما
BBC

پاکستان عوامی لیگ کے صدر شیخ رشید نے سپریم کورٹ کے احاطے میں میڈیا سے بات کرتے کہا کہ آج پاکستان کی تاریخ کا اہم ترین دن ہے۔ آج کرپشن کا تابوت نکلے گا۔ قوم حوصلہ نہ ہارے کیونکہ ہم یہ جنگ جیتیں گے۔ اگر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہمارے حق میں نہ بھی آیا تو اس صورت میں بھی ہم اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

بریکنگ’کرپشن کے خلاف تحریک جاری تھی، جاری ہے اور جاری رہے گی‘

پاکستان تحریکِ انصاف کے سینیئر رہنما شاہ محمود قریشی نے سپریم کورٹ کے احاطے میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ میڈیا کے شکر گزار ہیں جس نے پاناما کیس کے دونوں رخ عوام کے سامنے پیش کیے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’کرپشن کے خلاف ہماری تحریک جاری تھی، جاری ہے اور جاری رہے گی‘۔

بریکنگکورٹ روم ون کے باہر پولیس کی مزید نفری تعینات

پاناما
BBC

نامہ نگار عبدالہہ فاروقی نے بتایا کہ کورٹ روم ون کے باہر پولیس کی مذید نفری تعینات کر دی گئی ہے۔ 

پاکستان تحریک انصاف کی رہنما جب کورٹ روم ون پہنچیں تو ان کو اندر جانے سے روک دیا  جس پر انھوں نے احتجاج کیا کہ جب مریم اورنگزیب اور مصدق ملک عدالت کے اندر ہیں تو وہ کیوں نہیں جا سکتیں۔ ۔ 

دوسری جانب وزیر برائے کیڈ ڈاکٹر طارق فضل بھی عدالت پہنچ گئے ہیں۔ 

بریکنگ’انشاء اللہ‘

وزیر اعظم نواز شریف کے ترجمان ڈاکٹر مصدق ملک سے جب سوال پوچھا گیا کہ کیا پاناما کیس کا فیصلہ وزیر اعظم کے حق میں آئے گا تو ان کا کہنا تھا انشاء اللہ۔

ایک اور سوال کے جواب میں کہ پی ٹی آئی اس فیصلے کے حوالے سے کافی پراعتماد ہے تو ان کا کہنا تھا ’وہ ہر بات پر پراعتماد ہوتے ہیں‘۔