سیاست اور مذہب، قانون کا اطلاق مشکل ہو گا؟
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

قانون کی خلاف ورزی کا تعین اور انڈیا کی سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمد درآمد اورمشکل ہوگا۔

انڈیا کی سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے سیاست دانوں کی طرف سے انتخابات میں ووٹ حاصل کرنے کے لیے مذہب اور ذات پات کے استعمال پر پابندی عائد کر دی ہے۔

اس حوالے سے بی بی سی اردود سے بات کرتے ہوئے انڈیا کے روزنامہ ’دی ہندو‘ کے سابق مدیر اور تجزیہ کار سدہارت وردراجن کا کہنا تھا کہ اس قانون سے وہ غلط فہمی یا الجھاؤ ختم ہوا ہے جو خود سپریم کورٹ کے سنہ 1996 کے ایک حکم کے نتیجے میں پیدا ہو گیا تھا۔

ان کے بقول اب سیاستدانوں کی اس بات میں زیادہ وزن نہیں رہے گا کہ چونکہ مذہب ایک طریقۂ حیات ہے اس لیے سیاست میں اس کے ذکر سے یہ مطلب لینا درست نہیں کہ وہ مذہب کے نام پر سیاست کر رہے ہیں۔