پاکستانی ناول نگاروں کی توجہ سیاسی جرائم پر
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستانی ناول نگاروں کی توجہ سیاسی موضوعات پر

سنہ دو ہزار سترہ میں پاکستانی ناول نگاروں کی توجہ سیاسی اور جرائم کے سنسنی خیز موضوعات کی طرف جاتی دکھائی دیتی ہے۔

عمر شاہد حامد کا تیسرا نول ’دی پارٹی ورکر‘ اور سبین جویری کا پہلا ناول ’نو باڈی کلڈ ہر‘ پڑھنے والوں کی دلچسپی کا مرکز بنے۔

سبین کا یہ پہلا ناول ہفٹنگٹن پوسٹ کے سب سے زیادہ بے چینی سے انتظار کی جانے والی کتابوں کی سنہ دو ہزار سترہ کی فہرست میں شامل تھا۔ اور کراچی لٹریری فیسٹیول کے دوران عمر کو سننے اتنے شائقین آیے کے ایک بھی نشست خالی نہیں تھی۔

دونوں ناول متنازع بنے ہیں۔ یہ کہا گیا ہے کہ دی پارٹی ورکر میں ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین کا کردار لکھا گیا ہے۔ اور سبین جویری کی کتاب جو ایک پاکستانی سیاست دان کی زندگی پر مبنی ہے لوگوں کا کہنا ہے کہ بے نظیر بھٹو سے متاثر ہو کر لکھا گیا ہے۔ ففی ہارون کی عمر شاہد حامد اور سبین جویری سے بات چیت۔