اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’ایجنٹ سزا دے تو لوگ بےگناہ سمجھتے ہیں‘

غداری کے الزام میں سزا پانے والے ڈاکٹر شکیل آفریدی کے ایک رشتے دار عبدالواحد آفریدی کے مطابق ڈاکٹر شکیل آفریدی کو خلاف قانون سزا سنائی گئی ہے اور اس کے خلاف اپیل دائر کی جائے گی۔

اسامہ بن لادن کی تلاش میں امریکی سی آئی اے کے لیے ٹیکوں کی جعلی مہم چلانے والے ڈاکٹر شکیل آفریدی کو خیبر ایجنسی کی پولیٹکل انتظامیہ نے غداری کے الزام پر تیس برس قید اور جرمانے کی سزا سنائی ہے۔

پاکستان کے خُفیہ اداروں نے بائیس مئی دو ہزار گیارہ کو ڈاکٹر شکیل آفریدی کو ڈیوٹی سے گھر جاتے ہوئے حیات آباد کے قریب کارخانوں مارکیٹ سے گرفتار کر کے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا تھا۔

خیبر ایجنسی میں پولیٹکل انتظامیہ کے ایک افسر صدیق خان کے مطابق ڈاکٹر شکیل آفریدی کو غداری کا الزام ثابت ہونے پر سزا دی گئی ہے اور ایف سی آر کے تحت ان پر ساڑھے تین لاکھ روپے جُرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے اور جرمانہ ادا نہ کرنے کی صورت میں وہ مزید تین سال جیل میں گزاریں گے۔

ان کے ایک رشتے دار عبدالواحد آفریدی کی گفتگو سنیے جو انہوں نے عنبر خیری سے کی۔