اسلم بیگ کا ذاتی نہیں، فوج کا فیصلہ تھا

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 20 اکتوبر 2012 ,‭ 15:59 GMT 20:59 PST

میڈیا پلئیر

اسلم بیگ کا ذاتی نہیں، فوج کا فیصلہ تھا

سنئیےmp3

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

سپریم کورٹ کے سن انیس سو نوے کے انتخاب میں دھاندلی کے بارے میں فیصلے میں کہا گیا ہے کہ اس وقت کے صدر مرحوم غلام اسحق خان فوج کے سربراہ جنرل(ر) مرزا اسلم بیگ اور جنرل(ر) اسد درانی کی مدد سے غیر قانونی طور پر قائم کیے گئے انتخابی سیل کی حمایت کر رہے تھے۔ تاہم پاکستان کے سینیئر صحافی اور تجزیہ نگار عارف نظامی کا کہنا ہے کہ بینظیر بھٹو کو اقتدار سے ہٹانا اسلم بیگ کا ذاتی نہیں بلکہ ان کے ادارے کا فیصلہ تھا۔ سنیے عارف نظامی سے انٹرویو۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔