آذربائیجان کیمرے کی نظر سے

آخری وقت اشاعت:  پير 26 نومبر 2012 ,‭ 08:32 GMT 13:32 PST
  • ’آذربائیجان کیمرے کی نظر سے‘ مقابلے میں پہلے نمبر پر آئی تصویر میں ناگورنو کاراباخ میں عمر رسیدہ افراد ہنس کھیل رہے ہیں۔ یہ تصویر مسلح تصادم سے قبل لی گئی تھی۔ یہ تصویر عاصم طالب نے کھینچی تھی۔
  • نوے کی دہائی میں آذربائیجان اور آرمینیا کے درمیان جنگ ہوئی تھی۔ اس تصویری مقابلے میں دوسرے نمبر پر دارالحکومت باکو میں بی بی ہیبت مسجد کی یہ تصویر آئی۔ یہ مسجد تیرھویں صدی میں تعمیر ہوئی تھی۔ نوے کی دہائی میں اس کو دوبارہ تعمیر کیا گیا لیکن کوشش کی گئی کہ اس کی اصل حالت کو بحال رکھا جائے۔ اس مسجد کو کمیونسٹ دور میں تباہ کر دیا گیا تھا۔
  • تیسرے نمبر پر آنے والی تصویر حال ہی میں دارالحکومت میں تعمیر کیے گئے فلیم ٹاورز (Flame Towers) کی ہے۔
  • اس تصویری مقابلے کا انعقاد یورپی آذربائیجان سوسائٹی نے کیا تھا۔ اس سوسائٹی کے مطابق 750 تصاویر موصول ہوئی تھیں۔
  • مقابلے کے لیے موصول ہونے والی ایک تصویر میں قبلِ اسلام دور کے کِش گاؤں میں ایک چرچ کی تصویر۔
  • پوری دنیا سے پروفیشنل اور شوقیہ فوٹوگرافروں نے تصاویر بھیجیں۔
  • موصول ہونے والی تصاویر میں سے ایک سو تصاویر کی نمائش سینٹرل لندن میں لا گیلیریا میں ہو رہی ہے۔
  • یورپی آذربائیجان سوسائٹی کا کہنا ہے کہ یہ نمائش پورے یورپ کا دورہ کرے گی۔
  • یورپی آذربائیجان سوسائٹی کو امید ہے کہ اس نمائش کی بدولت وہ لوگ بھی ملک کا دورہ کریں گے جو پہلے کبھی یہاں نہیں آئے۔
  • تاہم ناقدین کا کہنا ہے کہ اس تصویری مقابلے میں ملک میں ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو نظر انداز کیا گیا ہے۔ ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ تصاویر میں غربت اور مشکلات سے دوچار ہزاروں افراد کو اجاگر نہیں کیا گیا۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔