دلی ریپ: احتجاجی مظاہرے جاری

آخری وقت اشاعت:  پير 24 دسمبر 2012 ,‭ 17:08 GMT 22:08 PST

دلی میں ریپ کےخلاف احتجاجی مظاہرے

  • پولیس کی جانب سے مظاہروں پر پابندی کے باوجود پیر کے روز بھی دلًی میں ریپ کے خلاف مظاہروں کا سلسلہ جاری رہا
  • وزیراعظم منموہن سنگھ نے ان مظاہروں میں تشدد کی اطلاعات کے بعد عوام سے پرامن رہنے کی اپیل کی ہے
  • ہزاروں افراد دلّی کے انڈیا گیٹ پر پہنچ کر ملزمان کو سخت ترین سزا دینے کا مطالبہ کر رہے تھے
  • پولیس کا کہنا ہے کہ نوجوانوں کے مظاہرے کو سیاسی رنگ دیا جا رہا ہے اور اس میں شر پسند عناصر شامل ہو گئے ہیں
  • پولیس نے انڈیا گیٹ اور راجپتھ کے علاقے رائے سنہا ہِلز میں مظاہرے کو غیر قانونی قرار دیا ہے اور وہاں دفعہ ایک سو چوالیس لگا دی ہے تاہم مظاہرین ابھی تک وہیں جمع ہیں
  • ریپ کا شکار لڑکی ابھی بھی ہسپتال میں ہے اور ڈاکٹروں کے مطابق اس کی حالت اب بھی نازک ہے
  • مظاہرین میں طلبہ، مختلف جماعتوں کے کارکان، عوام اور گھروں میں رہنے والی خواتین شامل تھیں
  • اتوار کو پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کا استعمال کیا تھا

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔