کوئٹہ دھماکوں کے بعد

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 11 جنوری 2013 ,‭ 07:07 GMT 12:07 PST
  • کوئٹہ میں جمعرات کو ہونے والے دھماکوں میں ہلاکتوں کی تعداد پچانوے تک پہنچ گئی ہے اور جمعہ کو ہلاک شدگان کی تدفین کی جا رہی ہے
  • ہلاک شدگان میں سے جمعرات کی شب تک پچیس افراد کی شناخت ہوئی تھی اور شناختی عمل جمعہ کو بھی جاری رہے گا
  • علمدار روڈ پر دہرے دھماکوں میں ہلاک ہونے والوں میں زیادہ تر شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے ہزارہ تھے
  • جمعہ کی صبح کوئٹہ پولیس نے جائے وقوعہ کو رکاوٹیں لگا کر بند کر دیا
  • لوگ دھماکے کے بارہ گھنٹے بعد بھی جائے حادثہ پر موجود باقیات کو شناخت کرنے اور اپنے پیاروں کو ڈھونڈے میں مصروف نظر آئے
  • علمدار روڈ پر ہونے والے دھماکے اتنے شدید تھے کے آہنی دروازے اور جالیاں اکھڑ کر دور جا گرے
  • پہلے دھماکے کا نشانہ اس تین منزلہ عمارت کے تہہ خانے میں واقع سنوکر کلب تھا
  • دھماکے سے نہ صرف سنوکر کلب مکمل طور پر تباہ ہو گیا بلکہ آس پاس کی عمارتوں کو بھی شدید نقصان پہنچا تھا

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔