سٹاک ہوم میٹرو کی خوبصورتی تصاویر میں

آخری وقت اشاعت:  بدھ 30 جنوری 2013 ,‭ 01:02 GMT 06:02 PST
  • سٹاک ہوم کی زیر زمین ٹرین سروس یعنی میٹرو کا ٹریک ایک سو پانچ کلو میٹر طویل ہے۔ اس کو دنیا کی سب سے بڑی آرٹ کی نمائش بھی کہا جاتا ہے۔ ایک سو دس میں سے نوے سٹیشنز میں 150 مصوروں نے اپنے فن کے جوہر دکھائے ہیں۔
  • سٹاک ہوم میں رہائش پذیر روسی فوٹو گرافر اور آئی ٹی آرکیٹیکٹ ایلیگزینڈر دراگونو کو زیرِ زمین ٹرین سٹیشنز کی تصاویر کھینچنے کا شوق ہے۔
  • اپنی تصاویر سے وہ کوشش کرتے ہیں کہ خالی سٹیشنز کی خوبصورتی اور خاص کردار کو نمایاں کرسکیں۔
  • ایلیگزینڈر کا کہنا ہے ’عام طور پر کسی بھی سٹیشن کو بالکل خالی پانا بہت مشکل ہے۔ اس لیے بہتر یہی ہے کہ آخری ٹرین کے بعد رات گئے تصویر بنائی جائے۔‘
  • ’بہت صبر کی ضرورت ہوتی ہے اس کام میں۔ اگر کوئی سٹیشن پر رہ گیا ہے تو آپ انتظار کرتے ہیں کہ وہ جائے۔‘
  • سنہ ساٹھ اور ستّر کی دہائی میں زیرِ زمین پتھر پر مختلف رنگوں کا سپرے کیا گیا۔
  • ایلیگزینڈر کہتے ہیں ’سٹاک ہوم میٹرو میں سب سے دلچسپ بلیو لائن ہے جہاں سٹیشنز غاروں کی صورت میں ہیں۔ یہ قدرتی اور انسان کے بنائے ہوئے کا بہترین امتزاج ہے۔‘
  • ’خوبصورتی ہمارے ارد گرد ہے اور ہمیں صرف سر اٹھانا ہے اور دیکھنا ہے۔‘
  • ایلیگزینڈر کہتے ہیں ’میں تصویریں بلیک اینڈ وائٹ کھینچتا ہوں اور پھر اس میں ان ایک یا دو رنگوں کا اضافہ کرتا ہوں جو میرے خیال میں سٹیشن کی بہترین عکاسی کرتے ہیں۔‘

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔