’شدت پسندوں کی مسکنیں پنجاب میں بھی ہیں‘

آخری وقت اشاعت:  پير 18 فروری 2013 ,‭ 15:14 GMT 20:14 PST

میڈیا پلئیر

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر سید علی حیدر اور ان کے گیارہ سالہ بیٹے کو فائرنگ کر کے ہلاک کردیا گیا ہے۔

سنئیےmp3

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر سید علی حیدر اور ان کے گیارہ سالہ بیٹے کو فائرنگ کر کے ہلاک کردیا گیا ہے۔ پاکستان میں ہدف بنا کر قتل کرنے کے ایسے واقعات کا سلسلہ کراچی سے لے کر خیبر پختونخوا اور پھر بلوچستان میں سامنے آ رہا ہے اور آج لاہور میں ڈاکٹر سید علی حیدر بھی شدت پسندی کا نشانہ بنے۔ ایسے میں کیا لاہور بھی اسی زد میں آیا یا آج کا واقعہ مختلف نوعیت کا ہے۔ اس بارے میں ہماری ساتھی نخبت ملک نے بات کی مسلم لیگ نواز کے رکن قومی اسمبلی اور سینیئر کالم نگار ایاز امیر سے۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔