بدھ چوبیس اپریل کا سیربین

بدھ چوبیس اپریل کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحے پر دیکھ سکتے ہیں۔ یہ پروگرام ایکسپریس نیوز پر نشر کیا گیا تھا۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے ایکسپریس نیوز پر نشر ہوتا ہے۔

انتخابات اور ایم کیو ایم پر حملے

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان کے تین صوبائی دارالحکومتوں میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں ہونے والے آٹھ بم دھماکوں کے بعد انتخابی سرگرمیوں پر خوف کے بادل چھا گئے ہیں اور انتخابی نعرے دھماکوں کی گونج میں دب کر رہ گئے ہيں۔

اِن دھماکوں میں سیاسی جماعتوں کے کارکنوں اور ہمدردوں سمیت گیارہ افراد ہلاک اور باسٹھ زخمی ہوگئے ہیں۔

کراچی میں ایک انتخابی دفتر کے قریب بم دھماکے کے خلاف ایم کیو ایم کی اپیل پر شہر میں بدھ کو کاروبار بند رہے۔

مزید تفصیل کے ساتھ دیکھیے کراچی سے سبین آغا کی رپورٹ۔

اسي بارے ميں کراچي ميں ايم کيو ايم کے سينئير رہنما فاروق ستار سے لیا گیا خصوصی انٹرویو بھی اسی حصے میں شامل ہے۔

سب سے آخر میں دیکھیے سوشل میڈیا پر آنے والی آپ کی آراء۔

عالمی خبریں، احمدی انتخابات سے باہر

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

اس حصے میں پہلے شامل ہیں عالمی خبریں۔

اس حصے میں شامل تھیں عالمی خبریں جن میں بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں ایک آٹھ منزلہ عمارت کے گرنے سے کم از کم 100 افراد ہلاک اور سینکڑوں زخمی ہو گئے جس کی تفصيل عارف شميم کی رپورٹ میں شامل تھی۔

اس کے بعد دیکھیے مزید عالمی خبریں۔

اس کے علاوہ اس حصے میں دیکھیں کہ پاکستان میں عام انتخابات کی تیاری دھیرے دھیرے زور پکڑ رہی ہیں لیکن ملک میں ایک گروہ ایسا ہے جو خود کو اس جمہوری عمل سے الگ رکھے ہوئے ہے اور وہ ہے جماعت احمدیہ۔ جماعت احمدیہ نے انیس سو ستتر کے بعد کسی بھی عام اليکشن میں اپنا حقِ رائے دہی استعمال نہیں کیا۔ اس کی کیا وجوہات ہیں؟

دیکھیے ربوہ سے نامہ نگار شمائلہ جعفری کی رپورٹ

پاکستان افغانستان تعلقات اور برسلز مذاکرات

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان اور افغانستان دو قريبي ہمسايہ ممالک ہيں۔ ليکن دونوں ملکوں کے تعلقات ميں تلخي اور کشيدگي کي ايک طويل تاريخ ہے۔ دنوں ملکوں کے تعلقات کو بہتر بنانے کے ليے اس ہفتے برسلز ميں امريکي وزير خارجہ جان کيري کي سربراہي ميں افغانستان کے صدر حامد کرزئي اور پاکستان کے سيکرٹري خارجہ جليل عباس جيلاني اور پاکستان فوج کے سربراہ اشفاق پرويز کياني کے درميان اہم ملاقات ہو رہي ہے۔

پلہ دیکھیے دونوں ملکوں ميں پائي جانے والي تلخي اور غلط فہيوں کي نوعيت پر کابل ميں موجود بي بي سي پشتو سروس کے نامہ نگار سيعد انور کی رپورٹ ميں۔

ان مذاکرات پر تجزيہ کرنے کے ليے پروگرام میں اسلام آباد سے براہ راست موجود تھیں سابق پاکستانی سفیر ڈاکٹر مليحہ لودھي۔

سب سے آخر میں دیکھیے آپ کی جانب سے سوشل میڈیا پر آنے والی آپ کی آراء۔

سب سے آخر میں دیکھیے آپ کی جانب سے سوشل میڈیا پر آنے والی آپ کی آراء۔

’تو پھر چلیں‘ کا انتخابی سلسلہ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

بدھ کو ويسے تو يہ وقت ہمارے ہفتہ وار سلسلے کلک کا ہوتا ہے ليکن پاکستان میں انتخابات ہونے تک آپ کلک ہماري ويب سائٹ بي بي سي اردو ڈاٹ کام پر بدھ کے روز اس پروگرام کے نشر ہونے کے فوری بعد ديکھ سکتے ہيں۔

آج سے انتخابات ہونے تک آپ وسعت اللہ خان کے ساتھ تو پھر چليں کا انتخابي سلسلہ ہر بدھ اور جمعہ کو ديکھيں گے۔

آج وسعت اللہ خان کے ہمراہ چلتے ہيں سندھ کے وسطی شہر نواب شاہ جہاں شايد ووٹ لینے والے اور ووٹ دینے والے الگ الگ دنیا کی مخلوق ہيں۔

تو پھر چلیں۔

اسی بارے میں