بدھ تین جولائی کا سیربین

بدھ تین جولائی کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحے پر دیکھ سکتے ہیں۔ یہ پروگرام پاکستان میں ایکسپریس نیوز پر نشر کیا گیا اور بی بی سی اردو پر لائیو سٹریم کیا گیا تھا۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے بی بی سی اردو ڈاٹ کام پر براہِ راست نشر ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ سیربین ایکپریس نیوز پر بھی دیکھا جا سکتا ہے۔

مصر میں فوج نے حکومت کا تختہ الٹ دیا

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

مصر کی فوج نے گزشتہ شب صدر محمد مرسی کو برطرف کرتے ہوئے ملک کا آئین معطل کرنے کے بعد ملک میں نئے صدارتی اور پارلیمانی انتخابات کروانے کا اعلان کیا ہے۔ جس وقت ہمارا پروگرام سیربین نشر کیا جا رہا تھا، اُس وقت مصر کی فوج کے اعلیٰ کمانڈروں کا اجلاس جاری تھا جبکہ فوج کی جانب سے صدر مرسی کو حالات کنٹرول کرنے کے لیے دی گئی مہلت ختم ہو گئی تھی۔

مصری فوج نے اڑتالیس گھنٹے کا الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا تھا کہ اگر حکومت اور اس کے مخالفین 'عوام کے مطالبات' ماننے میں ناکام رہے تو فوج مداخلت کرے گی مگر صدر مرسی نے فوج کے الٹی میٹم کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ مرتے دم تک اپنے آئینی عہدے کی حفاظت کریں گے۔

تفصيل کے ساتھ شفعي نقي جامعي۔

میران شاہ میں ڈرون حملہ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

شمالی وزیرستان کے صدر مقام میران شاہ میں تازہ ترين امریکی ڈرون حملے کے نتیجے میں سترہ افراد ہلاک اور دو زخمی ہو گئے۔ پاکستان نے اس حملے پر ايک بار پھر شدید احتجاج کیا ہے۔ ادھر افغان فوج کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ڈرون حملوں ميں پاکستاني حکومت کي رضامندي شامل ہے اور پاکستان امريکہ کو اہداف کي فہرست تک فراہم کرتا ہے۔ بي بي سي کے ساتھ ايک خصوصي انٹرويو ميں جنرل کريمي نے پاکستان پر طالبان کي پشت پناہي کا الزام لگايا اور کہا کہ اگر پاکستان چاہے تو يہ مسئلہ چند ہفتوں ميں حل ہو سکتا ہے۔ اس بارے ميں، عالیہ نازکی نے کچھ دير پہلے پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان اعزاز احمد چوہدري سے بات کي اور پوچھا کہ افغان آرمي چيف کے اس الزام پر کہ پاکستان طالبان کو کنٹرول کرتا ہے اور پاکستان چاہے تو افغانستان میں جاری شورش ہفتوں میں ختم ہو سکتی ہے، ان کا کيا ردعل ہے؟

نیلسن منڈیلا کا خاندانی تنازع اور شام میں شرعی نظام

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

جنوبی افریقہ کے سابق صدر نیلسن منڈیلا بدستور ہسپتال میں ہیں لیکن ان کے خاندان کے درميان ان کی قبر کا تنازہ شدت اختیار کرتا جارہا ہے کہ آخر ان کی تدفین کہاں کی جائے ۔ جنوبی افریقہ کی ایک عدالت نے حکم دیا ہے کہ منڈیلا کے تین بچوں کی باقیات کو دوبارہ منڈیلا کے آبائی گاؤں کونو میں دفنایا جائے۔ ان باقیات کو منڈیلا کے پوتے نے وہاں سے دوسرے مقام پر منتقل کرديا تھا۔ مزید تفصیل کی اس رپورٹ میں خدیجہ عارف سنیے۔

اس کے علاوہ شام میں شدت پسند اسلامی گروپوں کی طرف سے جاری مسلح شورش کے بارے میں بڑھتی ہوئی تشویش نے حلب میں دن دھاڑے ایک چودہ سالہ لڑکے کے قتل کے بعد مزید شدت اختیار کر لی ہے۔

محمد قتاعط کو شام کےشمالی شہر حلب میں گستاخی رسول کا الزام لگا کر دن دھاڑے سڑک پر گول مار کر ہلاک کر دیا تھا۔ باغیوں کے زیرِ قبضہ علاقوں میں شرعی نظام نافذ کیا جا رہا ہے۔

بی بی سی کے نامہ نگار پال وڈ اور کیمرہ مین فریڈ سکاٹ کی الیپو سے رپورٹ۔

کلک: پوشٹ مارٹم کے لیے جدید ٹیکنالوجی

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

اگر کسي کي موت پراصرار حالات ميں ہو، ليکن لواحقين يہ کہہ کر پوسٹ مارٹم کي اجازت نہ ديں کہ اس سے جسم کي بےحرمتي ہوتي ہے، تو کيا کيا جائے؟ اس مسئلے کا حل یونورسٹی آف زیورک نے اب بظاہر ڈھونڈ نکالا ہے۔ ہمارے ہفتہ وار سلسلے کلک میں آج نوشین عباس ہمیں اسی کے بارے میں بتا رہی ہیں۔

اسی بارے میں