اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پیر بائیس جولائی کا سیربین، حصۂ سوم

پاکستان کے صوبہ خیبر پختون خوا میں عوام کی سہولت کے لیے پہلی مرتبہ آن لائن ایف آئی آر درج کروانے کا نظام متعارف کرایا گیا ہے۔ اس نظام کے تحت لوگ اب گھروں میں بیٹھ کر انٹرنیٹ کے ذریعے ایف آئی آر درج کرا سکتے ہیں۔ کیا اس نئے نظام کے اجراء سے روایتی تھانہ کلچر میں بہتری آنے کا کوئی امکان ہے؟ پشاور سے رفعت اللہ اورکزئی کي رپورٹ۔

چند سال قبل ايف آئي آر درج کروانے ميں رکاوٹيں دور کرنے کے ليے اسي طرح کا نظام صوبہ سندھ کے شہر کراچي ميں بھي رائج کرنے کي کوشش کي گئي تھي۔ کراچي ميں يہ تجربہ کيسا رہا اس پر ہم نے بات ک سي پي ايل سي يعني، سِٹِزنز پوليس لي ايزاں کميٹي کے سابق سربراہ جميل يوسف سے اور پوچھا کہ نيٹ کے ذريعے ايف آئي آر درج کرانے کا تجربہ وہاں کيوں کامياب نہيں ہو سکا؟