اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

بہاولپور: حادثہ یا سازش؟

پچیس برس پہلے ، یعنی سترہ اگست انیس سو اٹھاسی کو‘ پاکستان کے فوجی حکمراں جنرل ضیا الحق بہاولپور کے قریب سی ون تھرٹی طیارے کے حادثے میں ہلاک ہوئے تھے۔

ان کے ساتھ پاکستان میں تعینات امریکی سفیر، ایک امریکی جنرل، آئی ایس آئی کے سابق سربررہ ا سمیت سمیت تیس سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے تھے۔

جنرل ضیاالحق نے سنہ ستتر میں ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت کا تختہ الٹ کر اقتدار سنبھالا تھا اور وہ گیارہ سال تک حکمرانی کرتے رہے۔ بہاول پور حادثے کی وجوہات پر کئی انکوائریاں ہوئیں اور اس کے بارے میں اب بھی مختلف حلقے متضاد آراء رکھتے ہیں۔

ضیا الحق کے بیٹے اعجاز الحق کا کہنا ہے کہ اُس وقت نہ امریکی اور نہ ہی پاکستانی حکام چاہتے تھے کہ اس واقعے کی حقیقت کو سامنے لایا جائے۔ سنیے اعجاز الحق اس بارے میں کیا کہتے ہیں، عنبر خیری کی اس رپورٹ میں: