بدھ 4 ستمبر کا سیربین

بدھ 4 ستمبر کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحے پر دیکھ سکتے ہیں۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو بی بی سی اردو ڈاٹ کام پر لائیو نشر کیا جاتا ہے۔ یہ پروگرام ایکسپریس نیوز پر بھی نشر کیا گیا تھا۔

کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن کا فیصلہ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان کی حکومت نے کراچی میں دہشت گردوں، بھتہ خوروں، اغوا کاروں اور شر پسند عناصر کے خلاف ٹارگٹڈ آپريشن کرنے کے ليے رینجرز کو مرکزی کردار دینے کا اعلان کیا ہے۔ کراچي ميں وفاقي کابينہ کے خصوصي اجلاس ميں وزیراعظم نواز شريف نے پولیس پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورت حال میں پولیس سے یہ توقع کرنا کہ وہ لوگوں کو تحفظ دے گی یا امن قائم کرے گی ممکن نہیں۔ انسانی حقوق کی تنظیمیں کہتی ہیں کہ ماضی میں بھی پولیس کو نظر انداز کر کے رینجرز کو کلیدی کردار دینے کے مثبت نتائج نہیں نکلے تھے۔

کراچی سے ریاض سہیل کی رپورٹ

اسي بارے میں مسلم ليگ نون کے رہنما طارق عظيم نے ہم سے بات کی۔

جنوبی افریقہ کے مزدور ہڑتال پر

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

جنوبی افریقہ میں سونے کي کانوں ميں کام کرنے والے ہزاروں مزدور تنخواہوں ميں اضافے کے ليے ہڑتال پر ہيں۔ ان کا مطالبہ ہے کہ ان کي تنخواہوں ميں چھ فيصد اضافہ کيا جائے۔ بی بی سی کے نامہ نگار ول راس نے جوہینسبرگ کے قریب ايک علاقے ڈریفونٹین میں ایسے کان کنوں سے ملاقات کی جن کا گزر بسر مشکل سے ہوتا ہے۔

ہماري ہاؤسِنگ سيريز ميں آج آپ کو امریکہ لے چلتے ہيں، جہاں ہاؤسنگ مارکیٹ میں مندي آئے ہوئے پانچ برس سے زیادہ ہو گئے ہيں۔ اس مندی نے پوری دنیا کی معیشت کو متاثر کیا۔ لیکن اگر آپ حالیہ اعداد و شمار پر نظر ڈاليں تو پتہ لگتا ہے کہ یہ مارکیٹ دھیرے دھیرے سنبھل رہی ہے۔ لیکن امریکہ کی بیشتر نوجوان نسل کے لیے اپنا گھر خریدنا ابھی بھی ناممکن ہونے کے برابر ہے۔

نیو جرسی سے مریکو اوئے کی رپورٹ

نصابی کتب میں تبدیلیوں کا فیصلہ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کی مخلوط حکومت نے نصابي کتُب ميں کچھ تبديلياں کرنے کا فيصلہ کيا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ سابق حکومت نے کتابوں سے اسلام اور جہاد سے متعلق جو قرآنی آیات نکال ديں تھیں انہيں واپس نصاب ميں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گيا ہے۔

پشاور سے ر رفعت اللہ اورکزئی کی رپورٹ

کلک

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ورچوول حقیقت ايک زمانے میں کچھ عرصے کے لیے مشہور ہوئي تھي ليکن پھر کچھ غائب سي ہو گئی۔ مگر اب لگتا ہے کہ شايد يہ دوبارہ اکيسویں صدی میں ٹیکنالوجی کی دنیا ميں مقبول ہو جائے۔ ٹیکنالوجی کي تازہ ترين خبروں کے ساتھ نوشيں عباس ورچوول رييليٹي کي دوبارہ مقبوليت پر ايک نظر ڈال رہي ہيں۔

اسی بارے میں