اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پینسٹھ سال پہلے۔۔۔

ستمبر انیس سو اڑتالیس میں حکومت ہند نے نظام حیدرآباد کے خلاف پولیس ایکشن کیا، یہ تو سب جانتے ہیں/ لیکن یہ بہت کم لوگوں کو معلوم ہے کہ اس فوجی کارروائی کے بعد ریاست حیدرآباد کے دیہی علاقوں میں ہزاروں کی تعداد میں مسلمانوں کو ہلاک کیا گیا۔ یہ بات خود حکومت کی تشکیل کردہ پنڈت سندر لال کمیٹی کی رپورٹ میں شامل ہے لیکن یہ رپورٹ کبھی باقاعدہ طور پر منظر عام پر نہیں لائی گئی۔ اس قتل عام کا ذکر آج بھی تاریخ اور نصاب کی کتابوں میں شامل نہیں ہے۔

دلی سے نامہ نگار سہیل حلیم کی خصوصی رپورٹ