اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ڈرون حملے فائدہ مند یا نقصان دہ

پاکستان کے دفترِ خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان ڈرون حملوں ميں وقفہ نہيں بلکہ اِن کا مکمل خاتمہ چاہتا ہے۔ آج اسلام آباد ميں ہفتے وار بريفنگ کے دوران دفترخارجہ کي ترجمان تسنيم اسلم نے واشنگٹن پوسٹ کي اُس خبر کي بھي ترديد کي جس ميں کہا گيا ہے کہ امريکہ نے پاکستان کي درخواست پر طالبان کے ساتھ مزاکرات کے دوران يہ حملے روک ديے ہيں۔ ڈرون حملوں سے متعلق پاکستان میں آج بھي يہ بحث جاري ہے کہ يہ دہشت گردي کے خلاف جنگ ميں موثر ہيں يا نہيں۔ نامہ نگار ارم عباسی نے یہ جاننے کی کوشش کی ہے کہ آیا یہ حملے انتہا پسندی کا شکار پاکستان کے لیے فائدہ مند ہيں یا نقصان دہ؟