اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

بلوچ عسکریت پسندوں سے مذاکرات کیوں نہیں؟

خوشحال خان ایکسپریس پر بم حملے کی ذمہ داری کالعدم عسکریت پسند تنظیم بلوچ ری پبلکن آرمی نے قبول کی ہے۔ گزشتہ کچھ ہفتوں سے بلوچ عسکریت پسندوں کا کاروائیوں میں اضافہ ہوا ہے۔ سوال یہ ہے کہ ملک میں دہشت گرد حملوں کرنے اور ذمے داری قبول کرنے والوں سے اگر حکومت مذاکرات کرسکتی ہے تو بلوچ عسکریت پسندوں سے کیوں نہیں۔

اس پس منظر میں بی بی اردو سروس کی ماہ پارہ صفدر نے اعتدال پسند بلوچ رہنما اختر مینگل سے بات کی۔