اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

کیا جنوبی ایشیا میں ایسا ریفرینڈم ممکن ہے؟

سکاٹ لینڈ میں ہونے والے ریفرینڈم میں برطانیہ کے ساتھ رہنے کے عوامی فیصلے کے بعد سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایک علیحدگی یا آزادی کے تنازعے کو پر امن اور جمہوری انداز میں طے کیا جا سکتا ہے۔ کیا سکاٹ لینڈ کا ماڈل کے جنوبی ایشا کے ممالک میں لاگو کیا جا سکتا ہے۔ سیربین میں اس بارے میں مباحثے کا اہتمام کیا گیا جس کی میزبانی اردو سروس کے سربراہ عامر احمد خان نے کی اور مہمانوں میں شامِل تھے باتھ یونیورسٹی کے انٹرنیشنل ریلیشنز کے پروفیسر ڈاکٹر افتخار مِلک، کشمیری دانشور عبدالمجید ترمبو، بلوچ رہنما حربیار مری، سری لنکا کی تمل تحریک کے سکالر شاستری رام چندرن اور بھارت کی شمال مشرقی ریاستوں کے حالات پر گہری نظر رکھنے والے تجزیہ کار سنجے ہزاریکا نے۔