اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

زندگی سے لڑتے ایک معذور شخص کی کہانی

دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں معذور افراد کی مدد کے لیے قوانین بنائے جاتے ہیں۔اُن کی آسانی کے لیے مختلف اقدامات کیے جاتے ہیں تا کہ وہ بھی عام لوگوں کی طرح زندگی گزار سکیں۔ لیکن پاکستان میں صورتحال مایوس کن ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں ذہنی اور جسمانی طور پر معذور افراد کی کُل تعداد پچاس لاکھ سے زیادہ ہے جو دنیا کے کئی ممالک کی کُل آبادی سے بھی زیادہ ہے۔ اِن میں بچوں کی تعداد چودہ لاکھ ہے۔ جبکہ ملک میں معذور افراد کی تعداد میں دو عشاریہ چھ پانچ فیصد کی شرح سے سالانہ اضافہ ہو رہا ہے۔ ڈیرہ غازی خان سے تعلق رکھنے والے سہیل یاسین بھی اِن پچاس لاکھ افراد میں سے ایک ہیں۔ اُن کی کہانی ، اُن ہی کی زبانی۔