اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’کئی واقعات روکے بھی ہیں‘

صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں سنیچر کو ایک خودکش حملے میں ہلاک ہونے والے چھ افراد کی تدفین اتوار کو کر دی گئی ہے جبکہ اس واقعے کے خلاف ہزارہ ٹاؤن میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی۔

ہزارہ برادری پر یہ کوئی پہلا حملہ نہیں تھا بلکہ اس سے پہلے بھی ایسے حملے ہو چکے ہیں۔ اس بارے میں بی بی سی سے بات کرتے ہوئے بلوچستان کے سیکرٹری داخلہ اکبر درانی کا کہنا ہے کہ حکومت نے ایسے کئی ممکنہ واقعات کو روکا بھی اور یہ کہنا غلط ہوگا کہ حکومت ہاتھ پر ہاتھ رکھے ہوئے بیٹھی ہے۔