اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’اب پاکستانی مرد کم بچے چاہتے ہیں‘

پاکستان میں بھی آبادی میں اضافہ اور اس کی منصوبہ بندی مشکلات کا شکار رہی ہے۔ کچھ برس پہلے حکومتیں سرکاری سطح پر منصوبہ بندی کی پالیسی پر کار بند تھی۔ مگر بعد میں اس عمل کا نام بدل کر اسے بہبودی خاندان کہا جانے لگا۔ آیا اب حکومت اب ایسی کیسی پالیسی پر عمل پیرا ہے ، یا نہیں، مانع عمل کے لیے کیا طریقہ کار مروج ہیں، کیا خطرات اور چیلنجز ہیں اور یہ کہ کیا عوامی سطح پر اس بارے میں لوگوں کی سوچ میں کوئی تبدیلی آئی ہے۔

زیبا ستار، پاپولیشن کونسل آف پاکستان کی سربراہ ہیں اور ان تمام معاملات سے پوری طرح باخبر میں۔ ان سے ہمارا پہلا سوال یہ تھا کیا منصوبہ بندی کے بارے میں کوئی سرکاری پالیسی ہے۔