عقیلہ آصفی
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

افغان استانی کے لیے اقوامِ متحدہ کا اعزاز

افغان ٹيچر عقیلہ آصفی کي بچیوں کی تعلیم کے ليے کوششوں کو سراہتے ہوئے انہيں اقوامِ متحدہ کی جانب سے دو ہزار پندرہ کا پناہ گزینوں کا نانسین ایوارڈ دیا گیا ہے۔

عقیلہ آصفی دو دہائیوں پہلے کابل میں خانہ جنگی سے بھاگ کر صوبہ پنجاب کے ضلع میانوالی منتقل ہوئیں، جہاں اُنہوں نے ایک خیمے میں بچیوں کے لیے سکول شروع کیا۔ وہ اب تک ايک ہزار سے زیادہ بچیوں کو تعلیم دے چکی ہیں۔

ہماری ساتھی عنبر شمسی نے اُن سے بات کي اور سب سے پہلے پوچھا کہ اعدادوشمار کے مطابق، 80 فیصد افغان تارکینِ وطن سکول نہيں جاتے ، تو اس کی کیا وجہ ہے؟